تنخواہوں کی عدم ادائیگی ، پروانشل ڈاکٹر ز ایسوسی ایشن کا احتجاج کا اعلان

تنخواہوں کی عدم ادائیگی ، پروانشل ڈاکٹر ز ایسوسی ایشن کا احتجاج کا اعلان

پشاور(سٹی رپورٹر)پروانشل ڈاکٹرایسوسی ایشن نے حکومت کی جانب سے سی پی ایس پی ٹریننگ ختم کرنے اورڈاکٹروں160کوتنخواہوں کی عدم ادائیگی پر احتجاج کااعلان کردیاہے۔پشاورپریس کلب میں160پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایسوسی ایشن کے صدرڈاکٹرامیرتاج ،جنرل سیکرٹری ڈاکٹر عالمگیر خان، ڈاکٹر فضل منان، ڈاکٹر عبد الواحد اور دیگر نے کہاکہ جولائی2018میں160پی جی ایم ا?ئی نے ایف سی پی ایس ا?ئی پاس کرنے والے ٹیم اوکوپی جی ایم ا?ئی کے ذریعے تعینات کیااورانہوں160نے ٹریننگ شروع کردی اس میں160ایک بنیادی شرط جہاں سے یہ ٹریننگ لی جاتی ہیں وہاں سے وظیفہ کاملناہے جس کے بغیران کی ٹریننگ خودبخودختم ہوجاتی ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت کواس بارے باربارا?گاہ کیاگیالیکن کوئی سنجیدگی نہیں160دیکھائی گئی اوراب اس حدتک پہنچ گئی کہ ان سب کے ٹریننگ سی پی ایس پی ٹریننگ ختم کردی گئی۔دوسری جانب جوٹی ایم اوپہلے سے کام کررہے ہیں ان سے رہائش الاؤنس ختم کی جارہی ہے ،انہوں نے کہاکہ مہنگائی کے اس دورمیں160تنخواہیں160بڑھائی جارہی ہے لیکن یہاں160پرڈاکٹروں کے وظیفوں سے کٹوتیاں160کی جارہی ہیں160جوسراسرزیادتی ہے۔انہوں نے کہاکہ قاضی حسین احمدمیڈیکل کمپلیکس کے ہاؤس ا?فیسرز چھ ماہ سے بغیرتنخواہ کام کررہے ہیں160حالانکہ اس پرسابقہ صوبائی حکومت نے ایک میٹنگ کے دوران رضامندی بھی ظاہرکی تھی لیکن موجودہ حکومت ان تنخواہوں160کی ادائیگی سے انکاری ہے۔انہو160ں نے کہاکہ چوتھامسئلہ انڈکشن کے طریقے کیلئے کوئی واضح اقدامات نہ کرناہیاگرحکومت سالوں160سے اس حوالے سے کوئی لائحہ عمل نہ دی سکی تویہ لمحہ فکریہ ہے۔اسی طرح160فاٹاڈاکٹرز،سیکورٹی بل اورایم اوایکٹ160جوں160کی توں160ہے جبکہ ایل ا?رایچ میں160کمپویٹرسسٹم کااجراء4 جس میں160ہرمریض کی رجسٹری ہوتی ہے اورہزاروں160مریض160قطاروں160میں160کھڑے ہوتے ہیں160۔انہوں نے کہاکہ حکومت کوئی بھی قدم اٹھانے سے پہلے سے ڈاکٹروں160کی نمائندہ تنظیموں160کواعتمادمیں لے تومسائل پیدانہیں160ہونگے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیاکہ انکے مطالبات فوری تسلیم کئے جائیں160بصورت دیگرایک ہفتہ بعداپنے حقوق کیلئے احتجاج شروع کرینگے اورہڑتال کرنے سے بھی گریزنہیں160کیاجائے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر