العزیز ریفرنس ، سرمایہ داد نے دیا تھا تو پھر حسین اور حسن نواز عدالت میقں ثابت کرتے: تفتیشی افسر

العزیز ریفرنس ، سرمایہ داد نے دیا تھا تو پھر حسین اور حسن نواز عدالت میقں ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر ) احتساب عدالت میں سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس میں پراسیکیوشن نے اپنے دلائل مکمل کر لئے ، نیب پراسیکیوٹر واثق ملک نے اپنے حتمی دلائل میں کہا کہ ظلم تو ملزموں نے ریاست کے ساتھ کیا، بغل میں ریکارڈ رکھ کر بیٹھے رہے اور کہتے رہے یہ ڈھونڈیں، العزیزیہ کے قیام کی وضاحت نہیں کی گئی، ریکارڈ جان بوجھ کر چھپایا۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ حسین اور حسن نواز اشتہاری ڈکلیئر ہو گئے لیکن عدالت میں پیش نہیں ہوئے، یہ بات سچ ہے سرمایہ دادا نے دیا توپھر حسین اور حسن نواز عدالت میں پیش ہو کر ثابت کرتے۔ سب حسن اور حسین نواز پرڈال دینا اور پر ان کاپاکستان سے بھاگ جانا، ملزم نواز شریف تکنیکی وجوہات کو بنیاد پر کر ان کے پیچھے چھپنا چاہ رہے ہیں۔ حضرت عمر فاروقؓ نے خلیقہ وقت ہونے کے باوجود اپنے لباس تک کا حساب دیا،خواجہ حارث ایڈووکیٹ آج (منگل ) کو اپنے دلائل کا آغاز کریں گے،دوسری جانب فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کے وکیل نے عدالت کی طرف سے پوچھے گئے 140میں سے 135سوالوں کے تحریری جواب جمع کرادیے ،دونوں ریفرنسز کی سماعت آج (منگل ) کو ہوگی ۔علاوہ ازیں نواز شریف گھٹنے میں تکلیف کے باعث احتساب عدالت میں پیش نہ ہوئے۔

العزیزیہ ریفرنس

مزید : صفحہ اول