فافن رپورٹ میں الیکشن دھاندلی بارے اہم نکات حذف ہیں ، پیپلز پارٹی

فافن رپورٹ میں الیکشن دھاندلی بارے اہم نکات حذف ہیں ، پیپلز پارٹی

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان پیپلز پارٹی کے سینیٹر تاج حیدر نے کہاہے کہ فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹ ورک (فافن) کی جانب سے اپنی رپورٹ میں مبینہ دھاندلی کی نشاندہی سے متعلق اہم نکات ہی حذف کیے گئے۔پی پی پی الیکشن سیل کے سربراہ تاج حیدر کے مطابق فارم 45 پر پولنگ ایجنٹ کے دستخط جیسا اہم مسئلہ ہی فافن کی رپورٹ میں موجود نہیں، تاہم اب رپورٹ سے ایسا محسوس ہورہا ہے کہ دستخط کے مسئلے کی تحقیقات ہوں گی کیونکہ ہر فارم 45 پر پولنگ ایجنٹ کے دستخط ضرور ہونے چاہیں۔فافن کی جانب سے 30 نومبر کو الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے نقطہ نظر کی توثیق کرتے ہوئے ایک رپورٹ شائع کی گئی۔ پی پی پی کے سینیٹر نے الیکشن ایکٹ 2017 کی 2 دفعات کا حوالہ دیتے ہوئے دعویٰ کیا کہ پولنگ ایجنٹس کے فارم 45 اور فارم 46 پر دستخط ضروری ہیں۔مذکورہ دفعات پریزائڈنگ افسر کو اس کا پابند بناتی ہیں کہ وہ ایجنٹ سے سوال کریں کہ انہوں نے ان دونوں فارمز پر اپنے دستخط کیوں نہیں کیے۔پی پی پی کے سینیٹر کے مطابق فافن کی جانب سے مرتب کی جانے والی اس رپورٹ سے ایسا ظاہر ہوتا ہے کہ یہ غیر متعلقہ مسائل کو اجاگر کرنے میں عمل پیرا ہے اور انتخابی عمل سے متعلق تمام مسائل کو اس کے اندر دبانے کی کوشش کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ فافن بھی اس دباؤ کا شکار نہیں ہوگا جس کا شکار میڈیا ہوچکا ہے۔ادھر پی پی پی کے سینیٹر تاج حیدر کی تنقید پر ردِ عمل دیتے ہوئے فافن کے ایک نمائندے نے کہا کہ ان کے پاس مکمل اعداد و شمار ہیں جس کے ساتھ رپورٹ کو شائع کیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ سیاسی جماعتوں کے خدشات کو دور کرنے کے لیے مطلوبہ اعداد و شمار ایک یا دودن میں شائع ہوجائیں گے۔

مزید : صفحہ آخر