ادھیڑ عمر خواتین سے عشق لڑا کر کروڑ پتی ہونے والی خاتون

ادھیڑ عمر خواتین سے عشق لڑا کر کروڑ پتی ہونے والی خاتون

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) لوگوں کی زندگیاں کمانے میں گزر جاتی ہیں اور وہ کروڑ پتی نہیں بن پاتے لیکن آپ یہ سن کر دنگ رہ جائیں گے کہ برطانیہ میں ایک خاتون عمررسیدہ خواتین کے ساتھ عشق لڑا لڑا کر کروڑ پتی بن گئی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق یہ 53سالہ وینڈی کک نامی خاتون نے جو ہم جنس پرست عمررسیدہ خواتین کے ساتھ عشق لڑاتی، ان کے ساتھ شادی یا سول پارٹنر شپ(ہم جنس پرستوں کے درمیان شادی کے مساوی معاہدہ)کرتی ہے اور پھر ان کی جائیداد میں حصے دار بن جاتی ہے۔ اس نے ڈاکٹر جین ویڈل نامی ایک 87سالہ خاتون کے ساتھ محبت کی اور اس کے ساتھ سول پارٹنرشپ کر لی،جس نے انتقال سے قبل اپنی ساڑھے 12لاکھ پاؤنڈ (تقریباً 22کروڑ 28لاکھ روپے) کی جائیداد وینڈی کک کے نام کر دی۔وینڈی کک نے اس سے قبل بھی ایک عمررسیدہ خاتون کے ساتھ سول پارٹنرشپ کی تھی اور اس نے بھی مرنے سے قبل اسے اپنی 25لاکھ پاؤنڈ (تقریباً 44کروڑ 57لاکھ روپے) کی جائیداد کا وارث بنا دیا تھا۔یہ دونوں خواتین یکے بعد دیگر وینڈی کے ساتھ شادی کے بعد اپنا گھر اور خاندان چھوڑ کر اس کے ساتھ رائٹ آئی لینڈ نامی جزیرے پر منتقل ہو گئی تھیں اور اپنی موت تک وہیں اس کے ساتھ رہیں۔ جین ویڈیل کا ایک 37سالہ بیٹا کرسٹوفر گوزڈین بھی تھا جو آکسفورڈ میں پروفیسر ہے۔ اس نے اسے اپنی وراثت میں حصہ نہیں دیا تھا اور تمام جائیدادوینڈی کے نام کر دی تھی۔ کرسٹوفر نے اب جائیداد سے حصہ لینے کے لیے عدالت میں مقدمہ دائر کر رکھا ہے۔ رپورٹ کے مطابق وینڈی کک پیشے کے اعتبار سے بیرسٹر ہے اور اب وہ برطانوی شہر نیوپورٹ میں رہائش پذیر ہے۔

مزید : صفحہ آخر