مغربی ممالک کا غریب ممالک کے ساتھ امتیازی سلوک قابل مذمت ، رحمن ملک

مغربی ممالک کا غریب ممالک کے ساتھ امتیازی سلوک قابل مذمت ، رحمن ملک

اسلام آباد (این این آئی) قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کے چیئرمین سینیٹر رحمن ملک نے کہا ہے کہ مغربی ممالک کا پسماندہ اور غریب ممالک کے ساتھ امتیازی سلوک قابل مذمت ہے، ہمیں اقوام متحدہ اور عالمی اداروں کو طاقت ور ممالک کی کی اجارہ داری سے آزاد کرنا ہو گا۔وہ پیر کو جنیوا میں 8 ویں عالمی ای پارلیمنٹ سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک کا پسماندہ اور غریب ممالک کے ساتھ امتیازی سلوک قابل مذمت ہے، ہمیں اقوام متحدہ اور عالمی اداروں کو طاقت ور ممالک کی کی اجارہ داری سے آزاد کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ویٹو پاور جیسے غیر مناسب اختیارات انصاف کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک جدید ٹیکنالوجی اور سمارٹ بم کو غریب ممالک کو ڈرانے کے لئے استعمال کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عالمی اداروں پر مغربی اور طاقتور ممالک نے قبضہ جمایا ہوا ہے، اقوام متحدہ بنیادی مقاصد کے حصول میں مکمل طور پر ناکام ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آدھی دنیا دہشت گردی کی لپیٹ میں ہے، ہمیں دہشت گردی کے خلاف بین الاقوامی قوانین بنانے ہوں گے، گلوبل پارلیمنٹ دنیا کو درپیش مسائل، ان کے حل اور قانون سازی میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم پچھلی تین دہائیوں سے دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں اور قربانیاں دے رہے ہیں۔

رحمن ملک

مزید : صفحہ آخر