علما کرام کا باہمی اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے ، مفتی محمد نعیم

علما کرام کا باہمی اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے ، مفتی محمد نعیم

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ مذہبی طبقات کا اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے، باہمی اختلافات عالمی سطح پراسلام کی بدنامی کا باعث ہے،مدینہ کی فلاحی ریاست میں حضور کا پہلا اقدام سود کا خاتمہ تھا،سودی معیشت کے ساتھ بیرونی قرضوں سے نجات حاصل نہیں کی جاسکتی۔پیر کو جامعہ بنوریہ عالمیہ میں ایم بی اے طلبہ سے گفتگو کرتے ہوئے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمدنعیم نے کہاکہ حضور کی زندگی کاہر پہلو انسانیت کو مکمل رہنمائی فراہم کرتاہے،مدینہ کی فلاحی ریاست میں حضور کا پہلا معاشی اقدام سود خاتمہ اور قرض حسنہ کا اجراء تھا ، سودی نظام اللہ کے ساتھ کھلی جنگ ہے وطن عزیز اس وقت تک ترقی نہیں کرسکتاجب تک اسلامی اقتصادی نظام نہ لایا جائے،انہوں نے کہاکہ نئی حکومت نے آتے ہی عوام کو بیروزگاری اور مہنگائی کے سواء کچھ بھی نہیں دیاایک طرف مہنگائی عروج کو پہنچ گئی ہے تو دوسری جانب تجاوزات آپریشن میں ہزاروں لوگ بے روز گار ہوئے ہیں ،تجاوزات کیخلاف آپریشن سے پہلے متاثرین کے لیے متبادلہ انتظام نہیں کیا گیا ، جس سے عوام میں مایوسی اورمحرومی میں اضافہ ہورہاہے، انہوں نے کہاکہ حکمران طبقہ 68سالوں میں الیکشن سے قبل عوام سے کیے ایک فیصد وعدے بھی پورے کیے ہوتے تو آج ملک اتنے گھمبیر مسائل میں گھرا ہوا نہ ہوتااور نہ ہی دنیا سے بھیک مانگ کر جگ ہنسائی کا سامان مہیا کر رہے ہوتے،انہوں نے کہاکہ وطن عز یز کی دیگر گوں حالات کے ذمہ دار حکمران ہیں جواقتدار میں آنے کے بعد لوٹ مار، کرپشن ، قومیت ، لسانیت،کے بدبو دار نعروں سے قوم کو تقسیم کرتے رہے ہیں اور قومی اتحاد ویکجہتی نقصان پہچانے کا باعث بنتے رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مذہبی طبقے کاباہم اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے ،علماء کرام اور مذہبی طبقے ڈیڑھ انچ کی مساجد کو نکل کر مشترکات میں متحد ہونا ہوگا باہم تفرقات ملک وملت کیلئے نقصان کا باعث ہیں ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر