تھر میں غذائیت کی کمی سے مزید 2 بچے جاں بحق ہوگئے

تھر میں غذائیت کی کمی سے مزید 2 بچے جاں بحق ہوگئے

تھرپارکر(خصوصی نامہ نگار)تھر پارکر میں غذائیت کی کمی اور مختلف امراض کے باعث سول اسپتال مٹھی میں مزید 2بچے انتقال کر گئے۔محکمہ صحت سندھ کے ذرائع کے مطابق غذائیت کی کمی اورمختلف امراض سے تھر پارکر میں رواں سال اب تک 547 بچے جاں بحق ہوچکے ہیں۔وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ کے مشیر برائے اطلاعات بیرسٹر مرتضی وہاب کے مطابق تھرپارکر میں بچوں کی اموات کی وجہ غذائی قلت کے ساتھ بچوں کی پیدائش میں وقفہ نہ ہونا بھی ہے۔انہوں نے اس ضمن میں بتایاکہ مٹھی ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر اسپتال میں تمام تر سہولتیں اور ادویات موجود ہیں، حاملہ یا بچے کو دودھ پلانے والی خواتین کے خاندانوں کو تین ماہ راشن دیا جائے گا۔مرتضی وہاب نے بتایا کہ لیڈی ہیلتھ ورکرز گھر گھر جاکر آگاہی فراہم کریں گی، دائیوں کی تربیت کیلئے حکومت نے کام شروع کر دیا ہے، تھرپارکر کے ڈاکٹروں کی وہیں پوسٹنگ کر رہے ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر