’پاکستان نوجوان لڑکیوں کے ذریعے بھارتیوں سے یہ کام کروا رہا ہے‘ بھارت نے نیا الزام لگادیا

’پاکستان نوجوان لڑکیوں کے ذریعے بھارتیوں سے یہ کام کروا رہا ہے‘ بھارت نے ...
’پاکستان نوجوان لڑکیوں کے ذریعے بھارتیوں سے یہ کام کروا رہا ہے‘ بھارت نے نیا الزام لگادیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان پر بے سروپا الزامات عائد کرنا بھارت کا مشغلہ ہے جن کے ثبوت مانگے جائیں تو وہ بغلیں جھانکنے لگتا ہے۔ حسبِ عادت اب اس کی طرف سے پاکستان پر ایک نیا الزام عائد کر دیا گیا ہے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق بھارتی خفیہ ایجنسی راءکے ایک عہدیدار نے پریس ٹرسٹ آف انڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ پاکستانی خفیہ ایجنسی لڑکیوں کے ذریعے بھارت ، بالخصوص کشمیر میں نوجوان کو شدت پسند بنا رہی ہے۔ یہ لڑکیاں سوشل میڈیا پر نوجوانوں سے رابطہ کرتی ہیں اور پھر ملاقات کے وعدے پر ان سے مختلف شدت پسندانہ سرگرمیاں کرواتی ہیں جن میں اسلحہ ایک سے دوسری جگہ منتقل کرنا اور پاکستان سے کشمیر میں داخل ہونے والے شدت پسندوں کی رہنمائی کرنا وغیرہ شامل ہیں۔

عہدیدار کا کہنا تھا کہ ”دو ہفتے قبل ہم نے سید شازیہ نامی ایک لڑکی کو گرفتار کیا جو فیس بک اور انسٹاگرام سمیت کئی سوشل میڈیا اکاﺅنٹس چلا رہی تھی۔ انٹیلی جنس نے اس کے زیراستعمال آئی پی ایڈریس کی کئی مہینوں تک نگرانی کی۔ اس دوران معلوم ہوا کہ وہ وادی میں مختلف نوجوانوں سے گفتگو کر رہی تھی اور انہیں ایک سے دوسری جگہ اسلحہ لیجانے کو کہہ رہی تھی۔وہ پولیس ڈیپارٹمنٹ کے کچھ حکام کے ساتھ بھی رابطے میں تھی۔ دوران تفتیش اس نے بتایا کہ اس کے علاوہ دیگر کئی خواتین بھی ہیں جو جہادی گروپوں میں شامل ہیں اور نوجوانوں کو شدت پسندی کی طرف راغب کرنے کا کام کر رہی ہیں اور ان سب کے پاکستان میں رابطے ہیں۔“

مزید : بین الاقوامی