وزیر اعظم عمران خان نے ایس پی پولیس شہید طاہر داوڑ کے خاندان کے لئے اب تک کا سب سے بڑا اعلان کر دیا 

وزیر اعظم عمران خان نے ایس پی پولیس شہید طاہر داوڑ کے خاندان کے لئے اب تک کا ...
وزیر اعظم عمران خان نے ایس پی پولیس شہید طاہر داوڑ کے خاندان کے لئے اب تک کا سب سے بڑا اعلان کر دیا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا ہے کہ افغانستان میں قتل ہونے والے پشاور کے سینئر پولیس آفیسر طاہر خان داوڑ کے اہل خانہ کے لئے وزیر اعظم عمران خان نے 7 کروڑ روپے کے مجموعی امدادی پیکیج کی منظوری دی ہے،انہوں نے طاہر داوڑ کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ پاکستان کے نڈر اور بہادر بیٹے تھے،طاہر داوڑ پر دو بار حملہ ہوچکا تھا، ان کے قتل کے بعد پی ایم نے نوٹس لیا اور جے آئی ٹی بنائی گئی جو اس کیس پر کام کر رہی ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ عوام اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے لازوال قربانیاں دیں ہیں، ان بے مثال قربانیوں کے باعث ملک میں امن بحال ہوا،بعض عناصر اپنے مذموم مقاصد کیلیے انتشار پھیلارہے ہیں، خصوصی طور پر سوشل میڈیا پر پاکستان کے خلاف پلان شدہ سازش کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ایس پی طاہر داوڑ 3 خاندانوں کے واحد کفیل تھے، وزیراعظم نے ان کی بیوہ بہنوں کو 5 کروڑ روپے اور 2 کروڑ روپے ان کے شہید بھائی کی اولاد کے لیے منظور کیے ہیں، اس کے ساتھ ہی طاہر داوڑ کے بیٹے کو اے ایس آئی کی ملازمت بھی دی جائے گی،طاہر داوڑ کا تعلق ایسے علاقے سے ہے جس سے کے پی پولیس کی ذمہ داری دگنی ہو جاتی ہے۔وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ کہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت کے مطابق طاہر داوڑ کے قتل کی تحقیقات کے لیے مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی (جے آئی ٹی ) تشکیل دی گئی ہے جس کی تحقیقات جاری ہیں جبکہ طاہر داوڑ کے قتل پر 5 رکنی پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی جائے گی جو حکومتی اور اپوزیشن نمائندوں پر مشتمل ہوگی اور جے آئی ٹی سے رابطے میں رہے گی۔انہوں نے کہا کہ جب افغان بارڈر پر ہمارے جوان کی لاش ہمیں نہیں دی گئی تو اس کی فوٹیج دنیا بھر میں چلی تھی، افغانستان ہمارا پڑوسی ملک ہے لیکن ہمارے جوان کی لاش ہمیں کیوں نہیں دی گئی ؟۔

شہر یار آفریدی کا کہنا تھا کہ کراچی میں تجاوزات کے خلاف آپریشن سے وفاقی حکومت کا کوئی تعلق نہیں ہے اور وزیراعظم کا کہنا ہے کہ تجاوزات کے خلاف آپریشن میں غریبوں کو تنگ نہیں کیا جائیگا، تجاوزات کے خلاف کارروائی بااثر افراد کے خلاف ہے جنہوں نے اپنے نام اور کاروبار سے متعلق ایک علیحدہ سوچ اپنائی ہوئی تھی۔مولانا سمیع الحق کے اندوہناک قتل کے حوالے سے وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی کا کہنا تھا کہ اس معاملہ پر وزیر اعظم نے انکوائری کا حکم دیا ہے جب تک صورتحال واضح نہیں ہوجاتی اس بارے میں بات نہیں کی جاسکتی تاہم اس کیس کی 99 فیصد انکوائری مکمل ہوچکی ہے، ابھی اس لیے کچھ سامنے نہیں لاسکتے تاکہ تحقیقات پر فرق نہ پڑے، جلد ہی تحقیقات مکمل ہوں جائیں گی۔

مزید : قومی