حکومت کے پاس ملک چلانے کیلئے صدارتی آرڈیننس لانے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں :ارشاد بھٹی

حکومت کے پاس ملک چلانے کیلئے صدارتی آرڈیننس لانے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ...
حکومت کے پاس ملک چلانے کیلئے صدارتی آرڈیننس لانے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں :ارشاد بھٹی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کہاہے کہ حکومت کے پاس موجودہ صورتحال میں ملک چلانے کیلئے صدارتی آرڈیننس لانے کے علاوہ کوئی راستہ نہیں ہے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ “ میں گفتگو کرتے ہوئے ارشاد بھٹی نے کہا کہ حکومت کے پاس موجودہ صورتحال میں ملک چلانے کیلئے واحد راستہ صدارتی آرڈیننس لانے کا ہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس وقت اپوزیشن کو اسی وقت ہی منایا جا سکتاہے جب اپوزیشن کے خلاف مقدمات ختم کردیں اور چیئر مین نیب بھی مرضی کالگا دیا جائے ۔

انہوں نے کہا کہ کیا پارلیمنٹ کے اجلاس اسی لئے کئے جارہے ہیں کہ وہ لوگ آئیں جن پر الزامات لگے ہوئے ہیں اور وہ پارلیمنٹ میں آکر نیب پر الزامات لگائیں اور چلے جائیں؟انہوں نے کہا کہ مجھے وزیر اعظم کے الفاظ پر اعتراض ہے کیونکہ قانون قانون ہوتاہے ، چائے زلفی بخاری ہوں یا عثمان بزدار قانون کے سامنے سب برابر ہیں ، عدالتوں کو اپنا کام کرنے دیں۔

مزید : قومی