گور نر ہاﺅس میں غلامی کی علامت بٹھا کر غلامی کی علامت مٹائی جارہی ہے:سلیم صافی

گور نر ہاﺅس میں غلامی کی علامت بٹھا کر غلامی کی علامت مٹائی جارہی ہے:سلیم ...
گور نر ہاﺅس میں غلامی کی علامت بٹھا کر غلامی کی علامت مٹائی جارہی ہے:سلیم صافی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار سلیم صافی نے کہاہے کہ گورنر پنجاب برطانوی پارلیمنٹ کے ممبر رہے ہیں، عمران خان نے گورنر ہاﺅس میں غلامی کی علامت کو بٹھا دیاہے اور کہہ رہے ہیں کہ میں غلامی کی علامت کی مٹا رہا ہوں ۔

جیونیوز کے پروگر ام ”رپورٹ کارڈ“ میں گفتگو کرتے ہوئے سلیم صافی نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے اپنے خدمتگاروں کو پہلے ٹکٹوں کی صورت میں اور بعد میں وزارتوں کی صورت میں نوازا ہے ، حکومت نے کچھ وزراءمجبوری کے عالم میں بھی لئے ہیں ، اس لئے ان کو نہیں نکالا جاسکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اعظم سواتی کا سب کچھ سامنے آنے کے بعد بھی وزیر اعظم کہتے ہیں کہ میں بے خبر ہوں اور ان کا دفاع کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی وزیر کونکالا جاتاہے یا شامل کیا جاتاہے تو وہ کارکردگی کی بناءپر نہیں ہوگا بلکہ کسی اور وجہ سے ہوگا !انہوں نے کہا کہ اگر تحریک انصاف ریاست مدینہ کا نام نہ لے اور غلامی کی علامتوں کانام نہ لیا جائے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے ، اگرغلامی کی علامت کی بات کرتے ہیں تو پھر کرکٹ بھی توغلامی کی علامت ہے ۔

انہوں نے کہ گورنر پنجاب بھی برطانوی پارلیمنٹ کے ممبر رہے ہیں اور ان کا بیٹا ابھی بھی برطانوی پارلیمنٹ کا ممبر ہے، گورنر ہاﺅس کے اندر غلامی کی علامت کو بٹھا دیا گیاہے اور وہ کہہ رہے ہیں کہ میں غلامی کی علامت کی مٹا رہا ہوں ۔ عمران خان نے میڈیا اور اپوزیشن سے لڑائی شروع کردی ہے اور بہت جلد عدلیہ سے بھی لڑائی شروع کردیں گے ۔

مزید : قومی