خیبر پختونخوا کےہرفردکو صحت اِنصاف کارڈملے گا،عمران خان کے خلاف تمام قوتوں نے اتحاد کرلیا:مشتاق غنی

خیبر پختونخوا کےہرفردکو صحت اِنصاف کارڈملے گا،عمران خان کے خلاف تمام قوتوں ...
خیبر پختونخوا کےہرفردکو صحت اِنصاف کارڈملے گا،عمران خان کے خلاف تمام قوتوں نے اتحاد کرلیا:مشتاق غنی

  



مردان(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کے انقلابی اقدامات کی بدولت آج پاکستانی شہری باشعور ہو چکا اور اُس کو اپنے مخلص اور ملک کو دیمک کی طرح چاٹنے والے رہنماؤں میں فرق کا پتہ چل چکاہے ،فروری 2020تک مہنگائی کی شرح میں کمی آنی شروع ہو جائے گی، صوبے کے ہرفردکو صحت انصاف کارڈملے گا،بجلی اور پیٹرول کی قیمتیں بھی گرنا شروع ہوں گی۔

مردان میں سپورٹس گالہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مشتاق احمدغنی کاکہناتھا کہمردان کے تعلیمی ادارے صوبے کے دوسرے تعلیمی اداروں کے لئے ایک مثال کی حیثیت رکھتے ہیں، تمام پرائیویٹ سکولزاورکالجز اسی پیٹرن پر ہر ڈویژن میں مقابلے منعقد کروائیں اور صحت مندانہ سرگرمیوں کے فروغ میں حکومت کا ہاتھ بٹائیں۔اُنہوں نے کہا کہجب ہم نے 2013 میں حکومت سنبھالی تو عمران خان کے وژن کے مطابق تعلیمی ایمرجنسی نافذ کی،اساتذہ کی بھرتیاں کیں، سکولوں کی ناگفتہ بہ حالات کو بہتر کیا اور 45 ہزار اساتذہ این ٹی ایس پر بھرتی کئے، سکولوں میں فرنیچر مہیا کئے، کھیلوں کے میدان بنائے، بچوں کے لئے سائنسی لیبارٹریاں اور لائبریریاں بنائیں تاکہ طلبا کو آگے بڑھنے کے تمام مواقع میسر ہوں۔اُنہوں نے کہا کہ یہاں تین طرح کا تعلیمی نظام نافذہے، ایک طبقہ انگلش میڈیم دوسرااردو میڈیم اورتیسرا مدارس میں تعلیم حاصل کرتاہے، ہم نے اس پالیسی کو ریفارم کرنے کی کوشش کی اور 2013میں پہلی جماعت سے انگلش میڈیم شروع کی اور آج وہ بچے چھٹی جماعت میں پڑھ رہے ہیں۔

مشتاق احمد غنی کاکہنا تھا کہ وزیر اعظم کے انقلابی اقدامات کی بدولت آج پاکستانی شہری باشعور ہو چکا اور اُس کو اپنے مخلص اور ملک کو دیمک کی طرح چاٹنے والے رہنماؤں میں فرق کا پتہ چل چکاہے ،اس وقت ملک کو ترقی وخوشحالی کے راستے پر چلانے والے عمران خان کے خلاف تمام قوتوں نے اتحاد کرلیا ہے،اب وہ چاہتے ہیں کہ ایوانِ اقتدار میں رہ کر اسی ملک کو ایزی لوڈفارمولے پر ہی چلاتے رہیں،اِن لوگوں نے ملکی خزانہ لوٹ کر ملک کو دیوالیہ ہونے کے قریب کیا اور غیرملکی قرضوں کا بے تحاشہ بوجھ ڈالا مگر اللہ کے فضل سے وزیر اعظم عمران خان نے دانشمندی اور حوصلے سے کام لیتے ہوئے ان مسائل پر قابو پانے کیلئے دن رات ایک کیا،اُن لوگوں نے ملکی ایئر پورٹ اور موٹروے گروی رکھ کر قرضے لئے مگر عمران خان نے ٹیکس چوری روک کر اپنے وسائل پر ملک چلانے کی بات کی۔انہوں نے واضح کیا کہ ہماری کل آمدنی چارہزار ارب ہے جن میں سے دوہزار بلین بیرونی قرضے اور سود کی ادائیگی میں چلی جاتی ہے ،باقی دوہزار بلین سے ہمارا ملک چل رہا ہے، فوج،پولیس،صحت،تعلیم ترقیاتی سکیمیں اس رقم میں پوری نہیں ہوتی اس لئے عمران خان نے اس رقم کو پانچ ہزار بلین کردیا ہے اور عنقریب اس کو آٹھ ہزاربلین پرلےکرجائیںگے۔انہوں نے کہا کہ فروری2020تک مہنگائی کی شرح میں کمی آنی شروع ہوجائےگی،صوبے کے ہرفردکوصحت انصاف کارڈ ملے گا،بجلی پیٹرول کی قیمتیں بھی گرنا شروع ہوں گی،مزید لنگرخانے شیلٹر ہومزبنائے جائیں گے تاکہ انتہائی غریب افرادکی بہتر کفالت ودیکھ بھال ہو سکے،راشن سکیم کے ذریعے مستحق افراد میں راشن کی تقسیم بھی جلد شروع کی جائے گی۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /مردان