صدرمملکت طلبہ یونینز بحالی کیلئے سپریم کورٹ ریفرنس بھجیں، حبیب اللہ شاکر

  صدرمملکت طلبہ یونینز بحالی کیلئے سپریم کورٹ ریفرنس بھجیں، حبیب اللہ شاکر

  



ملتان (سٹی رپورٹر)پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما و سابق جسٹس حبیب اللہ شاکر نے کہا ہے کہ صدر مملکت آرٹیکل 186کے تحت طلبہ یونینز کی بحالی کے لئے سپریم کورٹ ریفرنس بھیجیں اور سپریم کورٹ اس پر نظر ثانی کرے جیسے سابق صدر آصف علی زرداری نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کا ریفرنس (بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

2011میں سپریم کورٹ میں بھیجا اس وقت تمام پارٹیز ایک پیج پر ہیں کہ طلبہ یونینز کو فی الفور بحال کیاجائے تاکہ نئی نسل بھی ملک وقوم کی باگ دوڑ سنبھالنے کے لئے آگے آئے سرخ پرچم جدوجہد اور قربانی کی علامت ہے لاہور میں طلبہ یونیز کی بحالی کی جدوجہد میں جلوس نکالنے والے تین سو طلبہ کے خلاف مقدمات درج کئے گئے جن میں سات نامزد ہیں ان پر درج مقدمات ختم کئے جائیں پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نہ صرف خود طلبہ یونینز کی بحالی کے لئے آواز اٹھائیں بلکہ وہ ملک بھر کی پارٹی تنظیموں کو بھی ہدایت کریں کہ وہ بھی اس سلسلے میں اپنی ذمہ داری کو پورا کریں سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی اور سابق صدر آصف علی زرداری نے مارچ 2008میں طلبہ یونیز کی بحالی کے لئے بھرپور کوشش کی ان خیالات کا اظہار انہوں نے پریس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران کیا اس موقع پر زوار حسین قریشی، احد عارف گوندل، چوہدری پرویز اقبال، رانا یسین نون،، چوہدری محمد جمیل، ندیم خان، محمد رفیق ڈوگر، ملک مقبول احمد ایڈووکیٹس کے علاوہ طلبہ کی بڑی تعداد بھی موجود تھی حبیب اللہ شاکر نے مزید کہا کہ طلبہ نرسری کو پانی اور کھادڈالنا ہو گی کیونکہ اس نرسری سے مخدوم جاوید ہاشمی، شیخ رشید احمد، معراج محمد خان،لیاقت بلوچ، جہانگیر بدر، احسن اقبال، پرویز رشید، فرید پراچہ، حسین نقی، ناصر زیدی، رشید رضوی، نفیس صدیقی،مختار رضوی، طاہر محمد خان جیسے لوگ پیدا ہوتے ہیں اور ملک وقوم کی باگ دوڑ سنبھالتے ہیں لیکن ان طلبہ یونینز پر پابندی لگا دی ہے طلبہ یونینز مثبت سرگرمیوں میں حصہ لیتے ہیں انہوں نے کہا کہ 1973کے آئین کے آرٹیکل 7-2پاکستان کے اندر رہتے ہو ئے ہر شہری کو یونین، تنظیم میں حصہ لینے کا حق دیتا ہے آج اس وقت پورے پاکستان میں سٹوڈنٹس کی بحالی کا ایشو بنا ہواہے کہ طلبہ یونینز کو بحال کیا جائے اور آج کی نئی جنریشن بھی ہم سے تقاضا کرتی ہے کہ ہم ان کی رہنمائی کریں ہم نوجوان نسل کو آگے دیکھنا چاہتے ہیں کیونکہ مختلف ادوار میں طلبہ یونینز پر پابندی لگا کر ان کے حقوق سلب کئے گئے اس وقت ہم سب ایک پیج پر ہیں اور طلبہ یونینز کی بحالی چاہتے ہیں۔

حبیب اللہ شاکر

مزید : ملتان صفحہ آخر