ویمن چیمبر ز کو گرانٹ، عمارتیں، بلا سود قرضے فراہم کرنے کا مطالبہ 

 ویمن چیمبر ز کو گرانٹ، عمارتیں، بلا سود قرضے فراہم کرنے کا مطالبہ 

  



راولپنڈی(کامرس ڈیسک) راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے زیر اہتمام آل پاکستان تیسری ویمن چیمبرز صدور کانفرنس راولپنڈی میں ختم ہوگئی۔ کانفرنس کے آخری روز مشترکہ اعلامیہ جا ری کیا گیا جس میں مطالبہ کیا گیا کہ حکومت ای ڈی ایف فنڈز سے خواتین چیمبرز کو گرانٹ جاری کرے۔ خواتین کو چیمبرزکے لیے جگہ درکار ہیں،حکومت خواتین چیمبر کے لئے عمارتیں فراہم کرے، قومی اور صوبائی اسمبلیوں کی اسٹینڈنگ کمیٹی میں خواتین کو بھی نمائندگی دے جائے۔ راولپنڈی اسلام آباد کے لئے ایک ایکسپو مرکز قائم کیا جائے۔ حکومت نئے کاروبار کرنے پر بزنس ویمن کو پانچ لاکھ روپے تک بلا سود  قرضے فراہم کرے۔سی پیک زون میں خصوصی زون کے لیے خواتین کے لیے جگہ مختص کی جائے۔صدر راولپنڈی چیمبر صبور ملک نے مشترکہ اعلامیہ پیش کیا۔ اس موقع پر ملک بھر سے گیارہ سے زائد خواتیں چیمبرز کی صدور اور عہدیدار بھی موجود تھیں۔ صدر صبور ملک نے کہا کہ خواتین کی ملکی معیشت میں اہم کردار ادا کر رہی ہیں.خواتین کی ترقی کے لیے حکومتی تعاون اشد ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ قومی اور بین الاقوامی ایکسپو میں خواتین کو سٹال اور نمائندگی دی جائے.اور وزیر اعظم بزنس مشاورتی کونسل میں نمائندگی دی جائے۔

  کانفرنس میں ٹیکس معاملات، بزنس فنانسنگ، ٹریڈ ایکٹ، پائیدار ترقی کے اہداف، TDAPاور بورڈ آف انوسٹمنٹ کے رول کے حوالے سے بھی پریذینٹیشن دی گئیں۔اس موقع پر ایم پی اے شمیم، شیریں ارشد خان صدرچیمبر بہاولپور، مسز قرآن کریم صدر فیصل آباد،  گلناز بی بی صدر ہزارہ ڈویژن، مسز فریدہ رشیدصدراسلام آباد، فوزیہ حمیدصدر کراچی ساؤتھ، ماہین صاحبزادی صدرڈ کراچی کورنگی لبنیٰ بھیاٹ صدر لاہور  نازیہ بیگم صدرمردان، امبرین عباس، صدر ملتان رخسانہ نادرصدر پشاور، رخسانہ مدثر سینئر نائب صدر کوئٹہ ڈویژن، خواتین کمیٹی کی چیئر پرسن فوزیہ قاضی اور سابق صدور سمیت مجلس عاملہ کے ممبران بھی موجود تھے۔  کانفرنس میں وازیراعظم کی معاو ن خصوصی ثانیہ نشتر، معاون خصوصی ذوالفقار بخاری، چیئر مین سرمایہ کاری بورڈ زبیر گیلانی سمیت TDAPاور یوایس ایڈ کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

مزید : کامرس