اپنی مرضی کے ڈاکٹروں سے علاج کرانا زرداری کا حق ہے، پیپلز پارٹی

اپنی مرضی کے ڈاکٹروں سے علاج کرانا زرداری کا حق ہے، پیپلز پارٹی

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماؤں صدر پنجاب قمر زمان کائرہ، جنرل سیکرٹری چودھری منظور احمد، صوبائی وزیر سندھ سعید غنی‘ سنیئر نائب صدر چودھری محمد اسلم گل اور زونل صدر صداقت شیروانی نے کہا ہے کہ یہ سابق صدر مملکت آصف علی زرداری کا آئینی و قانونی اور انسانی حق ہے کہ ان کو اپنی مرضی کے ڈاکٹروں سے علاج کروانے کی مکمل اجازت دی جائے، بیرون ممالک سے علاج کروانے  کا فیصلہ بھی ان کے ذاتی معالج ہی کریں گے۔سابق صدر کو علاج کیلئے کراچی میں منتقل کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ حکومت پیپلز پارٹی کی لیڈر شپ کے ساتھ اچھا سلوک نہیں کررہی ہے ماضی میں بھی ہماری قیادت کو انتقامی کاروائی کا نشانہ بنایا گیا اور اب بھی ہماری لیڈر شپ کو ٹارگٹ کیا جارہا ہے حکومت کے ایسے روئیے کی مذمت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پہلی حکومتی آئی ہے جس کا ایجنڈا عوامی مسائل کا حل نہیں بلکہ اپوزیشن کو ٹارگٹ کرنا ہے اور اپوزیشن کو دیوار کے ساتھ لگانے کا کوئی بھی موقع حکومت ہاتھ سے نہیں جانے دیتی۔

پیپلز پارٹی 

 راولپنڈی(آئی این پی) پاکستان  پیپلزپارٹی نے بینظیر بھٹو شہید کی برسی راولپنڈی کے لیاقت باغ میں منانے کااعلان کردیا، قمر زمان کائرہ نے کہا کہ پہلی بارگڑھی خدا بخش کے بعد راولپنڈی میں برسی منارہے ہیں، جھوٹے کیسزسے پیپلزپارٹی کو ختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما قمرزمان کائرہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہ بلاول بھٹو نے پارٹی کی قیادت سنبھال لی ہے، انھوں نے فیصلہ کیا ہے 27دستمبر کو جلسہ جائے شہادت پر ہوگا۔قمرزمان کائرہ کا کہنا تھا کہ کچھ قیادتیں وہ ہوتیں ہیں جو وقت کے ساتھ گم ہوجاتی ہیں، لیاقت باغ میں آج جلسے کے انتظامات دیکھنے آئے تھے، ماضی میں بھی طاقتور انتہا پسند، سامراجی پیپلزپارٹی کا راستہ روکتے رہے، جھوٹے کیسز سے پیپلزپارٹی کو ختم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔پی پی رہنما نے کہا پہلی بار گڑھی خدا بخش کے بعد راولپنڈی میں برسی منارہے ہیں، ہماری قیادت نے عوام کے لیے جدوجہد کی ہے، بھاری دل سے بات کرتا ہوں یہاں جلسے کامشکل فیصلہ تھا کیونکہ بینظیر بھٹو اور لیاقت علی خان کی شہادت یہیں ہوئی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ گلے شکوے ہر جگہ ہوتے ہیں ہم پنجاب میں سب کوساتھ لیکر چلیں گے، خطرات کو دیکھ کر سیاست کرنے سے اچھا ہے سیاست ہی چھوڑ دیں۔مولانا فضل الرحمان کے حوالے سے قمرزمان کائرہ نے کہا مولانافضل الرحمان جو کہہ رہے ہیں وہ ہی اپوزیشن کہہ رہی ہے،ان کی بات میں وزن ہے، بلاول بھٹو نے کہا تھا عوام کی بہتری جو قدم لیں گے ساتھ ہوں گے، ہم نے کبھی کسی کیس میں رعایت نہیں مانگی۔پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما نے مزید کہا آصف زرداری اورفریال تالپور پر کیسز سندھ میں بنائے گئے اور کیسز کو یہاں اٹھاکر لایا گیا، اس ملک میں باقی کیلئے الگ پیپلز پارٹی کیلئے الگ قانون رہا ہے، سیاسی جماعتوں کاکام عوامی رابطہ ہے اوربھی جلسے ہوں گے۔

بے نظیر برسی

مزید : صفحہ آخر