تحریک انصاف کا تینوں سیاسی جماعتوں کے مقدمات کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کا مطالبہ

  تحریک انصاف کا تینوں سیاسی جماعتوں کے مقدمات کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کا ...

  



اسلام آباد(آئی این پی) الیکشن کمیشن میں پیپلز پارٹی کی مبینہ فارن فنڈنگ کیس کی تحقیقات کیلئے قائم سکروٹنی کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں پیپلز پارٹی کے رہنماء سردار لطیف کھوسہ پیش ہوئے، سکروٹنی کمیٹی نے پیپلز پارٹی کے وکلاء کو 11دسمبر کو دوبارہ طلب کر لیا، اجلاس کے بعد الیکشن کمیشن کے با ہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ ہمارے خلاف مضحکہ خیز الزام لگایا گیا کہ باہر کی کمپنی پی پی پی ایل ایل سی فنڈنگ کرتی ہے، پی پی پی ایل ایل سی وہ پولی تھین ری سائیکلنگ فرم ہے، وہ فرم چالیس سال سے کام کر رہی ہے،ہم نے ساری تفصیلات جمع کرادی ہیں کہ ہمیں ایک دھیلے کی فارن فنڈنگ نہیں ہوئی،درخواست گزار ہمارے خلاف کوئی ثبوت لانے سے قاصر ہیں،ایک وچ ہنٹنگ ہو رہی ہے، سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ خود پی ٹی آئی ثبوت دیتی نہیں ہے، ان کی فنڈنگ ایسے ذرائع سے ہوئی جو کہ ممنوعہ ہے، پی ٹی آئی والے چاہتے ہیں کہ ان سے پوچھ گچھ نہ ہو،  وہ بھاگ کیوں رہے ہیں جواب دیں، ان کا مقدمہ منطقی انجام تک پہنچا تو پی ٹی آئی کی بطور جماعت تحلیل ہو گی۔انہوں نے کہا کہ سکرو ٹنی کمیٹی صرف فارن فنڈنگ کی تحقیقات کر سکتی ہے،  لوکل ڈونرز کے لئے کی شناختی کارڈ کی ضرورت نہیں تھی،  لوکل ڈونرز  کے شناختی کار ڈ کی تفصیلات جمع کرانا ناممکن ہے اور نہ دیں گے۔ دوسری طرف مسلم لیگ (ن) نے تحریک انصاف کیخلاف ٹیکساس سے ہونیوالی مبینہ ٹرانزیکشنز کے حوالے سے الگ ریفرنس دائر کرنے کا اعلان کر دیا جبکہ پی ٹی آئی نے تینوں سیاسی جماعتوں کے فارن فنڈنگ مقدمات کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کا مطالبہ کر دیا،مسلم لیگ (ن) کے رہنما محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی نے ٹیکساس میں کمپنی رجسٹرڈ کرائی، جس کے ڈائریکٹرزفارن نیشنل ہیں، پی ٹی آئی ٹیکساس نے شہریوں سے لاکھوں ڈالر کے حساب سے رقم حاصل کی،پی ٹی آئی ٹیکساس نے پی ٹی آئی کے اکاؤنٹس میں پیسے بھجوائے، ہم ان کے خلاف ریفرنس دائر کریں گے۔جبکہ پی ٹی آئی رہنما فرخ حبیب نے کہا ہے کہ ن لیگ والے تاریخوں کے پیچھے چھپنا چاہتے ہیں، یہ وہی پانامہ والے قصے سنا رہے ہیں، رضیہ بٹ کا ناول انہوں نے یاد کیا ہو اہے وہ آکر کر سنا دیتے ہیں، ان کو بھاگنے نہیں دیں گے،بلاول بھٹو کو والد کے اربوں روپے کی لوٹی ہوئی رقم کا حساب دینا ہے۔پارٹی فنڈنگ کیس میں مسلم لیگ (ن) نے چندہ دینے والوں کے شناختی کارڈ نمبر فراہم کرنے کیلئے مزید وقت مانگ لیا،جس پر سکروٹنی کمیٹی کا اجلاس 11 دسمبر تک ملتوی کر دیا گیا۔

الیکشن کمیشن 

مزید : صفحہ اول