اکرم درانی کی چار نیب انکوائریوں میں 18دسمبر تک عبوری ضمانت منظور

      اکرم درانی کی چار نیب انکوائریوں میں 18دسمبر تک عبوری ضمانت منظور

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) اسلام آباد ہائیکورٹ نے رہبر کمیٹی کے کنوئنیر اکرم درانی کی چار مختلف نیب انکوائریوں میں 18 دسمبر تک عبوری ضمانت منظور، عدالت نے نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا ہے۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں دور کنی بنچ نے اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے کنوئیر اکرم خان دارنی کی جانب سے دائر درخواستوں پر سماعت کی،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کیا کہ اب کیا ہوا ہے، جس پر وکیل کامران مرتضی نے دلائل دیئے کہ رات کے ایک بجے نیب نے ان کے موکل کے گھر چھاپہ مارا ہے،عدالت نے بلٹ پروف گاڑی،وزارت ہاوسنگ میں بھرتیاں،آمدن سے زائد اثاثہ جات اور ڈائریکٹر کی تعیناتی کیسز میں درخواستوں پر عبوری ضمانت منظور کر کے سماعت 18 دسمبر تک ملتوی کردی ہے۔عدالت نے نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب بھی طلب کر لیا ہے،عدالت کی جانب سے اکرم درانی کو پانچ پانچ لاکھ روپے کے چار مچلکے جمع کرانے کی ہدایت کی گئی ہے۔اکرم درانی نے وکیل کامران مرتضی کے ذریعے درخواست دائر کی تھی جس میں نیب کو فریق بنایا گیا تھا اس موقع پر میڈیا سے گفتگو میں اکرم درانی نے کہا کہ نیب نے پشاور میں ان کے گھر پر چھاپہ مار ا اورچھاپے کے دوران وہ گھر پر موجود نہیں تھے،ان کا کہنا تھا کہ نیب والے عدالت میں بیان دے کر گئے اور بعد میں چھاپہ مار دیا۔

اکرم درانی

مزید : صفحہ اول