پشاور، قبر ستان بچاؤ تحریک کا قبضہ مافیا کی کارروائیوں کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

پشاور، قبر ستان بچاؤ تحریک کا قبضہ مافیا کی کارروائیوں کیخلاف احتجاجی ...

  



پشاور(سٹی رپورٹر) پشاور کے قبرستانوں پر قبضہ مافیا کی بڑھتی ہوئی کاروائیوں کے خلاف پیر کے روز احتجاجی مظاہرہ کے دوران قبرستان بچاؤ تحریک اور افغان مہاجرین پر مشتمل قبضہ مافیا کے درمیان خوفناک تصادم ہوتے ہوتے رہ گیا تھاجبکہ پولیس کی بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر حالات کو کنٹرول کرتے ہوئے متحارب گروپوں کو منتشر کردیا تھا جلوس جیسے ہی جبہ سہیل آباد کے مقام پر پہنچا تو وہاں افغان مہاجرین پر مشتمل قبضہ مافیا کا ایک بہت بڑا گروہ نعرہ بازی کرتے ہوئے سامنے آگیا گروہ کے ارکان نے قبرستان میں پارک سمیت ہر قسم کی تعمیرات کرنے کا کھلم کھلا اعلان کیا اور تحریک کے رہنماؤں کو سنگین دھمکیاں دیں اس سے حالات انتہائی سنگین ہوگئے اور دونوں طرف سے شدید نعرہ بازی شروع ہوگی تا ہم پولیس کی بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر حالات کو کنٹرول کرلیا اس موقع پر قبرستان بچاو حریک کے رہنماؤں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ قانون کے دائرے کے اندر رہتے ہوئے قبرستانو ن کے تحفظ کے لیے اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے قائدین نے مطالبہ کیا کہ قبرستانوں میں قبضہ مافیا کے خلاف کراچی کی طرز پر فرنٹیئر کور کی مدد سے بے رحمانہ آپریشن کیا جائے وقف قبرستانوں کے جیلی انتقالات کرنے والے پٹواریوں کو جیل بھیجا جائے اور محکمہ اوقاف کے افسران اور اہلکاروں کے خلاف مجرمانہ غفلت کے تحت سخت کاروائی کی جائے تفصیلا ت کے مطابق قبرستان بچاو تحریک اور افغان مہاجرین پر مشتمل قبضہ مافیا کے ما بین معاملا ت ٹھیک ہو نے کی بجائے مزید گھمبیر اور اُ لجھ رہے ہیں انتظا میہ کو چا ہیئے کہ وہ اس معا ملہ کو افہام و تفہیم اور سنجیدگی کے ساتھ اس مسئلہ کو حل کرے قبرستان بچاؤ تحریک کے عہدیداران نے آئندہ چند دنوں میں پشاور ہائی کورٹ میں ایک جامعہ اور پٹیشن دائر کرینگے

مزید : پشاورصفحہ آخر