”اگر مجھے کرکٹ بورڈ میں کام کرنے کا موقع ملا تو میں ۔۔“ سابق آل راونڈر عبدالرزاق بھی قومی ٹیم کی خراب کارکردگی پر خاموش نہ رہ سکے ،خواہش کا اظہار کر دیا

”اگر مجھے کرکٹ بورڈ میں کام کرنے کا موقع ملا تو میں ۔۔“ سابق آل راونڈر ...
”اگر مجھے کرکٹ بورڈ میں کام کرنے کا موقع ملا تو میں ۔۔“ سابق آل راونڈر عبدالرزاق بھی قومی ٹیم کی خراب کارکردگی پر خاموش نہ رہ سکے ،خواہش کا اظہار کر دیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان کے سابق آل راﺅنڈر عبدالرزاق نے آسٹریلیا میں قومی ٹیم کی خراب کارکردگی پر تنقید کرتے ہوئے کہاہے کہ غلط کھلاڑیوں کے انتخاب کی وجہ سے پاکستان کو آسٹریلیا میں شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا کیونکہ ٹیم میرٹ کی بجائے نیٹ میں پرفارمنس کی بنیاد پر منتخب کی گئی ۔

نجی ویب سائٹ کو دیئے گئے انٹرویو میں عبدالرزاق کا کہناتھا کہ سلیکٹرز کے پاس وہ نگاہ ہی نہیں جو موزوں پلیئرز کا انتخاب کر سکے، نسیم شاہ نے نیٹ میں کپتان اظہر علی کو پریشان کیا، اسی بنیاد پر انھیں ٹیم کا حصہ بنا لیا جو درست نہیں، یہ نوجوان کھلاڑی کے کیریئر کے ساتھ کھیلنے والی بات ہے۔انھوں نے کہا کہ قومی ٹیم کی ٹیسٹ رینکنگ کو بہتر بنانے کیلئے ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے، کوچنگ میرا جنون ہے،اس لیے باقاعدہ کورس کر کے اس شعبے میں آنا چاہتا ہوں، اگر مستقبل میں پاکستان کرکٹ بورڈ کے ساتھ کام کرنے کا موقع ملا تو بہترین نوجوانوں بالخصوص آل راو¿نڈرز تیارکر کے دوں گا۔

ایک سوال پر عبدالرزاق نے کہاکہ سری لنکن ٹیم کا پاکستان آ کر ٹیسٹ سیریز کھیلنا خوش آئند ہے، مجھے یقین ہے کہ سیریزکے کامیاب انعقاد سے بنگلہ دیش سمیت دیگر انٹرنیشنل ٹیمیں بھی یہاں ا? کر کھیلیں گی۔انھوں نے کہا کہ بھارتی فاسٹ بولر جسپریت بمرا ان دنوں بہترین پرفارم کررہے ہیں، انھوں نے وقت کے ساتھ ساتھ خود کو بہت بہتر کیا ہے،پاکستانی فہیم اشرف بھی اچھے آل راو¿نڈر بن سکتے ہیں، انھیں اپنی فٹنس کے ساتھ بیٹنگ اور بولنگ پر بھی خصوصی توجہ دینا ہوگی۔

مزید : کھیل