آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست کس نے دلوائی ؟ فردو س عاشق اعوان نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست کس نے دلوائی ؟ فردو س عاشق ...
آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیخلاف درخواست کس نے دلوائی ؟ فردو س عاشق اعوان نے تہلکہ خیز دعویٰ کر دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق معاملے کا فیصلہ سپریم کورٹ نے سنا دیاہے اور چھ ماہ میں قانون سازی کرنے کا وقت دیا گیاہے تاہم اب اس معاملے پر مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے نہایت ہی حیران کن دعویٰ کر دیاہے ۔

نجی ٹی وی ” ہم نیوز “ کے پروگرام میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان کا کہناتھا کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیخلاف پٹیشن کس نے دائر کی اس کا وزیراعظم کو علم ہے ،وزیراعظم کے پاس تمام زمینی حقائق اور انٹیلی جنس انفارمیشن موجود ہے ، وہ شیئر نہیں کرنا چاہتے یا اس وقت ہماری قومی ضرورت ہے کہ ان تمام مسائل کو زیر بحث نہ لائیں ، یہ نہیں ہو سکتا کہ وزیراعظم کوا ن ایشوز سے متعلق آگاہی نہیں ہے ، وہ جانتے ہیں کہ پٹیشن دائر کرنے والا کون تھا اور ن کو پش کرنے والے کونسے عناصر تھے ، اس کے تانے بانے اپوزیشن سے ملتے ہیں ۔پاکستان اس طرح کے مسائل کا متحمل نہیں ہو سکتا ،آپ نے دیکھاکہ جب چوتھے دن فیصلہ آیا تو سٹاک مارکیٹ کا کیا حال ہوا۔

فردوس عاشق اعوان کاکہناتھا کہ حزب اخلاف آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کی قانون سازی کو بار گیینینگ چپ کے طور پر استعمال کر رہی ہے ۔ان کا کہناتھا کہ قیاس آرائیاں اور ہر شخص اپنی مرضی کے تبصروں کے ذریعے نئی داستان بیان کر رہا تھا ، وزیراعظم نے اس طرف اشاہر کیا کہ جو لوگ یہ سمجھ رہے ہیں کہ شائد حکومت کسی توہین کی زد میں آجائے گی یا ہم عدالت کے کسی فیصلے کے آگے کھڑے ہو جائیں گے اور عدالتی حکم نہیں مانیں گے تو ان لوگوں کی حوصلہ شکنی ہوئی ہے ، وزیراعظم قانون کی بالادستی پر یقین رکھتے ہیں ۔

شمیر اطلاعات کا کہناتھاکہ اپوزشن آرمی چیف کے اہم معاملے سے متعلق قانون سازی کو لے کر حکومت پر دباﺅ ڈالنا چاہتی ہے ،آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا مسئلہ سیاسی نہیں بلکہ قومی ہے اس لیے اپوزیشن کو سیاست نہیں کرنی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ لندن اپارٹمنٹس سے متعلق ہونے والی پیش رفت پر شہزاد اکبر پریس کانفرنس کریں گے ۔

مزید : قومی