7 سال کی عمر میں اپنے ہی بھائی کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی نے 25 سال بعد اپنی کہانی سنادی

7 سال کی عمر میں اپنے ہی بھائی کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی ...
7 سال کی عمر میں اپنے ہی بھائی کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بننے والی لڑکی نے 25 سال بعد اپنی کہانی سنادی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)برطانوی ٹی وی ’چینل 4‘ پر گزشتہ روز ’دی فیملی سیکرٹ‘ شو کی نئی قسط نشر ہوئی جس میں ایک بہن بھائی اور ان کی ماں شریک ہوئے۔ شو میں بہن نے اپنے بھائی کے متعلق ایسا شرمناک انکشاف کیا کہ ٹی وی دیکھنے والا ہر شخص مبہوت رہ گیا۔ میل آن لائن کے مطابق 33سالہ کیتھ نامی اس خاتون نے بتایا کہ وہ 7سال کی تھی جب اس کے بھائی راجرنے اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانا شروع کیا۔ وہ ہفتے میں تین بار اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بناتا تھا اور یہ سلسلہ چار سال تک چلتا رہا۔رپورٹ کے مطابق اس وقت راجر کی عمر 9سال تھی۔

کیتھ کا کہنا تھا کہ ”25سال تک میں اپنے ساتھ ہونے والے اس سلوک پر خاموش رہی ۔ میں جانتی تھی کہ خاندان میں کوئی میرا یقین ہی نہیں کرے گا۔ بالآخر 32سال کی عمر میں جب میں ماں بنی تو میرا یہ خوف دور ہو گیا اور میں نے اپنی فیملی کو سب کچھ بتادیا۔ میں نے پولیس میں بھی رپورٹ درج کروائی لیکن پولیس نے یہ کہہ کر راجر کے خلاف کارروائی کرنے سے انکار کر دیا کہ جب اس نے جرم کیا، تب اس کی عمر بہت کم تھی۔“

کیتھ نے شو میں سامنے بیٹھے اپنے بھائی سے کہا کہ ”ہمارے درمیان کوئی ایسا قریبی تعلق نہیں تھا۔ تم مجھے جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔“اس شو پر ناظرین نے سوشل میڈیا پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ لوگوں کا کہنا تھا کہ ”جنسی زیادتی کے ملزمان کو کیسے اس طرح نیشنل ٹی وی پر بطور مہمان بلایا جا سکتا ہے؟ یہ تو بالکل ایسے ہی ہو گیا جیسے آپ بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی پر شو کریں اور شو میں بات کرنے کے لیے بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والے کسی مجرم کو بلا لیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس