قیامت کی نشانی، میاں بیوی کو قتل کرنے کے بعد جنسی زیادتی، انتہائی شرمناک خبر آگئی

قیامت کی نشانی، میاں بیوی کو قتل کرنے کے بعد جنسی زیادتی، انتہائی شرمناک خبر ...
قیامت کی نشانی، میاں بیوی کو قتل کرنے کے بعد جنسی زیادتی، انتہائی شرمناک خبر آگئی

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں تہرے قتل، لاش کی بے حرمتی اور جنسی زیادتی کی ایسی اندوہناک خبر آئی ہے کہ سن کر شیطان بھی شرم سے منہ چھپاتا پھرے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ واردات بھارتی ریاست اترپردیش کے شہر اعظم گڑھ میں ہوئی جہاں نصیر الدین نامی درندے نے رات کے وقت ایک گھر میں گھس کر میاں بیوی اور ان کے 4ماہ کے بیٹے کو قتل کرکے خاتون کی لاش کے ساتھ جنسی زیادتی کی اور پھر ان کی 10سالہ بیٹی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔

یہ 38سالہ بدطینت شخص اعظم گڑھ کے علاقے مبارک پورہ میں رات کے پچھلے پہر داخل ہوا۔ اس نے پہلے 35سالہ آدمی کو قتل کیا۔ اس کے بعد اس کی 30سالہ بیوی اور 4ماہ کے بیٹے کو موت کے گھاٹ اتارا اور دیگر دو بچوں کو زخمی کیا۔ اس کے بعد وہ 3گھنٹے تک خاتون کی لاش کے ساتھ جنسی زیادتی کرتا رہا اور پھر خاتون کی 10سالہ زخمی بیٹی کو اپنی درندگی کا نشانہ بناڈالا۔ اس وحشی نے لاش کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیو بھی بنائی جو بعد ازاں اس نے اپنی سالی کو دکھائی۔ اس کی سالی نے پولیس کو بتایا کہ وہ یہ ویڈیو دیکھ کر لرز اٹھی۔

پولیس کے مطابق لاشوں اور زخمی ہونے والی 10سالہ بہن اور 4سالہ بھائی کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ ملزم نے اسے انہیں قتل کرنے کے لیے خنجر اور بھاری پتھر کا استعمال کیا۔ پولیس کو میاں بیوی کی لاشیں برہنہ حالت میں ملیں۔ پولیس نے ملزم کو اس کے گھر سے گرفتار کر لیا جس نے دوران تفتیش جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزم لاشوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا عادی مجرم ہے۔ وہ اس سے قبل ہریانہ، دہلی اور مغربی بنگال میں بھی ایسے ہی جرائم کا ارتکاب کر چکا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی