اپوزیشن حکومت سے بہت بڑا سمجھوتہ کرنے جارہی ہے ،حامد میر کادعویٰ

اپوزیشن حکومت سے بہت بڑا سمجھوتہ کرنے جارہی ہے ،حامد میر کادعویٰ
اپوزیشن حکومت سے بہت بڑا سمجھوتہ کرنے جارہی ہے ،حامد میر کادعویٰ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار حامد میر نے کہاہے کہ ایسا لگتاہے کہ اپوزیشن ایک بہت بڑا سمجھوتہ کرنے جارہی ہے ،ایسا کرکے اپوزیشن عمران خان کی بی ٹیم بن جائے گی اور اپوزیشن کی حیثیت کچھ نہیں رہے گی ۔

جیونیوز کے پروگرام ”آج شاہ زیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ اس وقت حکومتی جماعت اوراتحادیوں کی صفوں میں بے چینی ہے لیکن کچھ معاملات میں اپوزیشن بھی اکٹھی نظر نہیں آتی ، اپوزیشن کی بڑی پارٹی مسلم لیگ ن ہے جس کی کوئی پالیسی نظر نہیں آتی ۔اب اگر لندن میں بیٹھ کر ملاقاتی ہوتی ہیں تو اس کا فائدہ عمران خان کی حکومت کوہوگا ۔

حامد میر کا کہنا تھاکہ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے میں شہبازشریف نے جو تقریر کی تھی تو لگ رہا تھا کہ جیسے وہ مستقبل کے وزیر اعظم کی حیثیت سے تقریر کررہے ہیں جیسے ان کی جانب سے کہا گیا کہ اگر مجھے چھ ماہ دیدیے جائیں تو میں سارے مسئلے حل کردوں گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت اسلام آباد میں تھرتھلی مچی ہوئی ہے اور جوڑ توڑ ہورہاہے ،اس موقع پر شہباز شریف اگر لندن میں بیٹھے رہیں گے تو عمران خان سے زیادہ خوش کوئی نہیں ہوگا ۔ حامد میر کاکہنا تھا کہ مریم نواز کے خاموش ہونے سے لگتاہے کہ مریم نواز کا بیانیہ خاموش ہوچکاہے اور ان کی نمائندگی کرنیوالوں کا بیانیہ بھی بدل چکاہے ۔ انہوں نے کہا کہ جولوگ مریم نواز کے بہت قریب تھے ، ان کی سرگرمیاں بھی بہت پراسرا ر ہیں ، وہ دن کوکچھ اور کہہ رہے ہوتے ہیں اور شام کوکچھ اور کہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ سمیت اپوزیشن کی دیگر جماعتیں بھی پرویز مشرف کے حوالے سے خاموش ہیں ، صرف میڈیا نے اس معاملے کو اٹھایا ہواہے ۔ انہوں نے کہاکہ ایسا لگتاہے کہ اپوزیشن ایک بہت بڑا سمجھوتہ کرنے جارہی ہے اور ایسا کرکے اپوزیشن عمران خان کی بی ٹیم بن جائے گی اور اپوزیشن کی حیثیت کچھ نہیں رہے گی ۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد