سرعام موت بانٹتی بسیں، شکرگڑھ کا سفر خوف کی علامت بن گیا

سرعام موت بانٹتی بسیں، شکرگڑھ کا سفر خوف کی علامت بن گیا
سرعام موت بانٹتی بسیں، شکرگڑھ کا سفر خوف کی علامت بن گیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)شکرگڑھ کی ناکارہ بسیں خوف کی علامت بن گئیں ، اب سفر غیر محفوظ ہو گیا ، بسیں موت کے پروانے بانٹنے لگیں لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔ لوگ سفر کرنے سے گھبرانے لگے۔

ویسے تو لاہور سے شکرگڑھ کا سفر بہت ہی مشکل سمجھا جاتا تھا لیکن اب خطرناک بھی سمجھا جانے لگا ۔ تین دنوں میں 2بڑےحادثے رونما ہوگئے۔ جمعرات کو لاہور سے چک امرو سٹیشن کی جانب جانے والی بس موٹروے پر اترتے ہی نارووال سے پیچھے حادثے کا شکار ہوگئی۔ مسافروں کا کہنا ہے کہ کہ بس کی رفتار بہت زیادہ تھی لیکن ان کو بتایا گیا کہ بریک فیل ہو گئےہیں گاڑی کو کنٹرول کرنے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن گاڑی کنٹرول نہ ہوئی اور سیدھی کھیتو ں میں جاگری جس میں خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان تو نہ ہوا لیکن دو افراد شدید اور درجنوں معمولی زخمی ہوئے جنہیں طبی امداد دے کر فارغ کر دیا گیا۔

ڈرائیور اور کنڈیکٹر کی ہٹ دھرمی کی حد ہےحضرات مسافروں اور زخمیوں کو بے سروپا چھوڑ کر اسی وقت فرار ہوگئے۔ مسافروں کو متبادل گاڑی بھی فراہم نہ کی گئی جس سے وہ ذلیل وخوار ہوئے اور راستے میں لوگوں سے لفٹ لے کر گھر پہنچے۔

خیال رہے کہ دو روز قبل نارنگ منڈی کے قریب اسی طرح سکھوچک سے لاہور آنے والی بس نے دو مسافرویگنوں کو ٹکر ماری جن میں غیرقانونی سلنڈرلگائے گئے تھے وہ پھٹنے سے آگ لگی جس میں 17افراد زندہ جل گئے اور درجن سے زائد بری طرح جھلس گئے تھے۔جس کے بعد بھی اعلیٰ حکام خواب خرگوش سے بیدار نہ ہوسکے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -نارووال -