وزیراعظم کے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ پر ایک کروڑ ڈالرسے زائد کی بدعنوانی کے الزام پر تحقیقات شروع، نیب کے نوٹسز

وزیراعظم کے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ پر ایک کروڑ ڈالرسے زائد کی بدعنوانی کے ...
وزیراعظم کے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ پر ایک کروڑ ڈالرسے زائد کی بدعنوانی کے الزام پر تحقیقات شروع، نیب کے نوٹسز

  

 کراچی (ویب ڈیسک) مشیر خزانہ حفیظ شیخ نیب کراچی کے دو نوٹسز کے باوجود تحقیقات کے لیے پیش نہیں ہوئے، یکے بعد دیگرے جاری نوٹسز پر انھیں 28 اکتوبر اور بعد ازاں یکم دسمبر کو پیش ہونے کا کہا گیا تھا۔ذرائع نیب کے مطابق عبدالحفیظ شیخ پر ایک کروڑ ڈالرسے زائد کی بدعنوانی کے الزام میں تحقیقات ہورہی ہیں، ان پر سابقہ ادوار میں قومی خزانے سے غیر قانونی ادائیگی کا الزام ہے۔دوسری جانب فنانس ڈویژن نے کہا ہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب )کی جانب سے وزیر اعظم کے مشیر برائے خزانہ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ کو کسی قسم کو کوئی نوٹس تاحال موصول نہیں ہوا۔

ایکسپریس کے مطابق نیب کی جانب سے وزیراعظم کے مشیر عبدالحفیظ شیخ کو دوسرا نوٹس جاری کیا گیا ہے۔ ‏نیب کمبائن انویسٹی گیشن ٹیم نے حفیظ شیخ کو یکم دسمبر کو طلب کیا تھا لیکن نیب کی جانب سے طلبی کے باوجود مشیر خزانہ پیش نہیں ہوئے، نیب کی جانب سے پہلا نوٹس 28 اکتوبر کو پیش ہونے کے لیے جاری کیا گیا تھا۔نیب کے مطابق کیئر پروجیکٹ کے تحت سسٹم نہیں لگا جس کے باوجود کمپنی ’’اگیلیٹی‘‘ کو ادائیگی کردی گئی۔

ادھر فنانس ڈویژن نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مشیر خزانہ ڈاکٹر عبد الحفیظ شیخ کسی بھی معاملے میں قانون کے مطابق نیب سے مکمل تعاون کرنے کے لیے تیار ہیں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -