کورونا سے متاثرہ کے ایم سی ملازم کا تنخواہ روکنے پر اپنے باس سے انوکھا ترین انتقام ، دفتر پہنچ گیا اور ۔۔

کورونا سے متاثرہ کے ایم سی ملازم کا تنخواہ روکنے پر اپنے باس سے انوکھا ترین ...
کورونا سے متاثرہ کے ایم سی ملازم کا تنخواہ روکنے پر اپنے باس سے انوکھا ترین انتقام ، دفتر پہنچ گیا اور ۔۔

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )کراچی شہر کا سب سے بڑ ابلدیاتی ادارے ” بلدیہ عظمیٰ کراچی “ کے کورونا سے متاثرہ نے تنخواہ روکنے اور نوکری سے فارغ کرنے پر انتقاماً ڈائریکٹر ایچ آر ایم کو دفتر پہنچ کر گلے لگا لیا اور بوسہ لیا ۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے ” کے ایم سی “ آفس میں آ ج نہایت ہی حیران کن واقعہ پیش آیا ہے جہاں ملازم نے ڈائریکٹر ایچ آر ایم سے نوکری سے نکالنے اور تنخواہ روکنے پر تاریخ کا انوکھا ترین انتقام لے لیاہے ۔شہزاد انور نامی شخص کو ڈائریکٹر ایچ آر ایم نے پانچ اکتوبر کو کرپشن کی شکایات پر معطل کر دیا تھا اور اس کی تنخواہ روک لی تھی ، شہزاد انور لانڈھی میں اسسٹنٹ دائریکٹر تعینات تھا ۔

شہزاد انے کے والدین کو کورونا تھا جس کے باعث یہ وائرس اس میں بھی منتقل ہو گیا تاہم اپنا بدلہ لینے کیلئے وہ کے ایم سی کے دفتر پہنچا اور ڈائریکٹر ایچ آر ایم جمیل فاروقی کے کمرے میں داخل ہوا جہاں وہ دیگر افسران کے ساتھ موجود تھے ، شہزاد انور نے جمیل فاروقی کو گلے لگای اور ان کا بوسہ لیا ، اس عمل کے بعد اس نے اپنی کورونا پازیٹو ہونے کی رپورٹ دکھائی تو وہاں بیٹھے تمام افراد میں کھلبلی مچ گئی اور سب اپنی کرسیاں چھوڑ کر فرار ہو گئے تاہم جمیل فاروقی نے سیکیورٹی کو طلب کیا اور شہزاد انور کوبلڈنگ سے باہر نکلوایا ۔

کے ایم سی کے دیگر عملے سے شہزاد انورنے ہاتھ ملایاتھا ، انہوں نے بھی کورونا ٹیسٹ کروانے کیلئے ہسپتال سے رابطہ کر لیا ہے جبکہ جمیل فاروقی کافی پریشان دکھائی دے رہے ہیں ۔

مزید :

قومی -ڈیلی بائیٹس -