نجکاری کے نا م پر ملازمین کا معاشی قتل عام بند کیا جائے : اور نگزیب کشمیری 

    نجکاری کے نا م پر ملازمین کا معاشی قتل عام بند کیا جائے : اور نگزیب ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

                                                            پبی ( نما ئندہ پاکستان) محکمہ ڈاک اور سکولوں کی نجکاری نامنظور، نجکاری کے نام پر ملازمین کا معاشی قتل عام بند کیا جائے محکمہ ڈاک کی نجکاری سے 40 ہزار ملازمین بے روزگار ھوجائینگے۔قرضے حکمرانوں نے لئیے،اداروں کو آشرافیہ نے لوٹا اور IMF شرائط غریب عوام اور سرکاری ملازمین پر لاگو کر رھے ھیں۔اداروں کی نجکاری کے خلاف ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہروں کا اعلان کرینگے۔ان خیالات کا اظہار اورنگزیب کشمیری مرکزی سیکرٹری جنرل ایپکا پاکستان نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا۔کہ نگران حکومت بھی سابقہ کرپٹ حکومتوں کے روش پر چل رہی ھے۔سابقہ کرپٹ حکمرانوں نے نجکاری کے نام پر ملک کے قیمتی اثاثے بھیج ڈالے۔اب باقی ماندہ ادارے موجود نگران حکومت نجکاری کے نام پر فروخت کر رہے ہیں۔جن کی وجہ سے سرکاری ملازمین دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور ھے۔نگران حکومت کو چاہیے۔کہ ملک کو جو کرپٹ آشرافیہ نے دیوالیہ بنا دیا ھے۔ان کے پیٹ سےکرپشن کا مال نکال کر قومی خزانے میں جمع کریں۔لیکن موجودہ نگران حکومت بھی اپنے عیاشیوں، پروٹوکول ،فلیگ والے چمچاتی گاڑیوں میں مصروف عمل ھے۔ان کو غریب عوام اور سرکاری ملازمین سے کوئی سروکار نہی۔انہوں نے دھمکی دی۔کہ محکمہ ڈاک، سکولوں، اور دیگر اداروں کے نجکاری کا فیصلہ واپس نہ لیا۔تو اسلام آباد پارلیمنٹ ھاوس کے سامنے دھرنا دینگے۔