"سندھ میں حلقہ بندیاں  دھاندلی پیکیج ہے" جی ڈی اےنے صوبائی الیکشن کمشنر کو فی الفور  ہٹانے کا مطالبہ کر دیا 

"سندھ میں حلقہ بندیاں  دھاندلی پیکیج ہے" جی ڈی اےنے صوبائی الیکشن کمشنر کو فی ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سندھ میں گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کی جانب سے بڑا مطالبہ سامنے آیا ہے ۔ جی ڈی اے کے  رہنماؤں ڈاکٹر صفدر علی عباسی اور سردار عبدالرحیم نے الیکشن کمیشن کی جانب سے سندھ میں حلقہ بندیوں کو زرداری لیگ کا تیار دھاندلی پیکیج قرار دیتے ہوئے کہا ہے گہ اگرسندھ کے عوام کی دشمن زرداری لیگ کو ایک بار پھر دھاندلی زدہ الیکشن کے ذریعے اقتدار دینا ہے تو الیکشن کروانے کا کیا جواز بنتا ہے اگر اس مرتبہ الیکشن کمیشن اور انتظامیہ نے انتخابات میں کسی بھی قسم کی دھاندلی کرائی تو عوام ایسے الیکشن کو کسی بھی صورت قبول نہیں کرے گی۔

 "جنگ " کے مطابق جی ڈی اے رہنماؤں نے اپنے مشترکہ بیان میں مطالبہ کیا کہ سندھ کے صوبائی الیکشن کمشنر کو فی الفور منصب سے ہٹایا جائے اور حلقہ بندیوں میں ناجائز تبدیلیوں کو درست کیا جائے۔ جی ڈی اے رہنماؤں نے الیکشن کمیشن کی جانب داری کے ثبوت کے طور پر لاڑکانہ میں سابقہ ایم پی اے معظم عباسی کی مثال دی کہ پی ایس 11سے معظم عباسی کا اپنا اور مخصوص علاقے اور خاندان کے ووٹ  سازش کے تحت پی ایس 12میں منتقل کیے تاکہ پی ایس 11سے الیکشن میں حصہ نہیں لے سکے اور حلقہ میں اس وجہ سے نا جائز اور غیر منطقی ردوبدل کی ہے کیونکہ معظم عباسی نے 2مرتبہ پیپلز پارٹی کو ان کے سیاسی گڑھ میں شکست فاش دی ۔