لبرل والدین کے بچوں کو کن مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے؟ تحقیق میں اہم نتیجہ سامنے آ گیا

لبرل والدین کے بچوں کو کن مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے؟ تحقیق میں اہم نتیجہ ...
لبرل والدین کے بچوں کو کن مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے؟ تحقیق میں اہم نتیجہ سامنے آ گیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (نیوز ڈیسک) لبرل والدین کے بچوں کو کن مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے؟ تحقیق  میں اہم نتیجہ  سامنے آ گیا ۔انسٹی ٹیوٹ آف فیملی اسٹڈیز اینڈ گیلپ کی جانب سے کرائے گئے ایک مشترکہ سروے سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ لبرل ماں باپ کے ٹِین ایج بچوں کو ممکنہ طور پر نفسیاتی مسائل کا سامنا رہتا ہے۔ غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق، لبرل والدین کے نوعمر بچوں کو ذہنی مسائل کا زیادہ امکان ہوتا ہے، آزاد خیال والدین کے اپنی اولاد کے ساتھ تعلقات کا معیار خراب تر ہوتا ہے اور یہی بات بچوں کی ذہنی نشوونما پر سب سے ز یادہ اثرات مرتب کرتی ہے۔ 

"جنگ " کے مطابق  ریسرچ اور سروے کرنے والی ٹیم میں سرکردہ محقق جوناتھن روتھ ویل کا کہنا تھا کہ قدامت پسند اور انتہائی قدامت پسند والدین اپنے نو عمر بچوں کی ذہنی صحت کا دھیان رکھنے کیلئے بچوں کی تربیت کے حوالے سے زیادہ خیال رکھتے ہیں۔ اس معاملے میں لبرل والدین کا اپنے بچوں کی ذہنی صحت کا خیال رکھنے کے معاملے میں سکور سب سے کم ہے کیونکہ یہ لوگ اپنے بچوں میں نظم و ضبط کی ٹریننگ کیلئے کام نہیں کرتے۔ تحقیق کے مطابق صرف 55 فیصد لبرل والدین کے بچوں کی ذہنی صحت بہتر پائی گئی جبکہ اس کے مقابلے میں قدامت پرست والدین کے 77 فیصد بچوں کی ذہنی صحت بہتر پائی گئی۔