متاثرین کو دیوار کیساتھ اور دہشتگردوں کو گلے لگایا جا رہا ہے،حامد رضا

متاثرین کو دیوار کیساتھ اور دہشتگردوں کو گلے لگایا جا رہا ہے،حامد رضا

 لاہور(سٹاف رپورٹر) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے متاثرین کو دیوار کے ساتھ اور دہشت گردوں کو گلے لگایا جا رہا ہے۔ دہشت گردی کے متاثرین کی آواز نہ سننے کے نتائج خطرناک ہوں گے۔ حکومت کو مارنے والوں کی نہیں مرنے والوں کی فکر ہونی چاہیے۔ سمیع الحق اور منور حسن پاکستان کو طالبان کے حوالے کرنے کے ایجنڈے پر چل رہے ہیں۔ کالعدم قرار دی گئی تنظیم سے ریاست کے مذاکرات دراصل ”مذاق رات“ ہیں۔ شہداءکے خون کا سودا نہیں ہونے دیں گے۔ طالبان کا ریموٹ کنٹرول پاکستان سے باہر ہے اس لیے مذاکرات سے امیدیں وابستہ کرنا حماقت ہے۔ طالبان اور ان کے سرپرستوں کو پاکستان یرغمال نہیں بنانے دیں گے۔ دہشت گرد اپنے بیرونی آقاﺅں کی پراکسی وار لڑ رہے ہیں۔ آئین میں دہشت گردوں اور باغیوں سے مذاکرات کی گنجائش نہیں۔ ڈاڑھی والے اور کلین شیو طالبان ایکسپوز ہو رہے ہیں۔ جب تک طالبان آئین اور قانون کو قبول نہیں کرتے، مذاکرات بامقصد نہیں ہو سکتے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلوچستان کے دورے سے واپسی پر پارٹی کارکنوں اور عہدیداروں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ محب وطن دینی و سیاسی قوتیں خاموش تماشائی نہ بنیں اور ملک کو آگ اور خون کے گڑھے میں گرنے سے بچانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔ معاملات سدھار کی بجائے بگاڑ کی طرف جا رہے ہیں۔

حامد رضا

مزید : صفحہ آخر


loading...