ہچکیوں سے فوری نجات کیلئے ڈاکٹروں نے انتہائی آسان طریقہ بتادیا، سانس روکنے کی بجائے۔۔۔

ہچکیوں سے فوری نجات کیلئے ڈاکٹروں نے انتہائی آسان طریقہ بتادیا، سانس روکنے ...
ہچکیوں سے فوری نجات کیلئے ڈاکٹروں نے انتہائی آسان طریقہ بتادیا، سانس روکنے کی بجائے۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ہچکی سے نجات پانے کے لیے مناسب علاج کی بجائے دیسی ٹوٹکے زیادہ مشہور ہیں، جن میں سانس کا روک لینا، ٹھنڈے پانی کا ایک گلاس پینا، اپنی زبان کو باہر کی طرف کھینچنا اور چینی کھانا وغیرہ شامل ہیں۔اگرچہ عام طور پر ہچکی چند منٹ تک ہی رہتی ہے مگر یہ طویل عرصے تک بھی کسی انسان کو لاحق ہو سکتی ہے۔ جیسا کہ برطانیہ کی ایک 27سالہ بیوٹیشن لیزا گریوز کو گزشتہ 8سال سے مسلسل ہچکی لگی ہوئی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ انسان کے پیٹ کے اعضاءاور سینے کے اعضاءکے درمیان موجود ڈایافرام(Diaphragm) پردہ یا جھلی ہچکی کا باعث بنتی ہے۔

مزید جانئے: اپنی غذاءمیں ایک تبدیلی کرکے آپ پھیپھڑوں کے سرطان سے محفوظ رہ سکتے ہیں، سائنسدانوں نے انتہائی مفید مشورہ دے دیا

جب ڈایافرام کھانے کی کسی چیز یا دیگر کسی عوامل کی وجہ سے سکڑتی ہے یا حرکت میں آتی ہے تب انسان کو ہچکی لاحق ہو جاتی ہے۔برطانوی اخبار ”ڈیلی میل“ کی رپورٹ کے مطابق برٹش سوسائٹی آف گیسٹروانٹالوجی کے پروفیسر ڈاکٹر اینٹن ایمانوئیل کا کہنا ہے کہ ”اس پردے کے اشتعال میں آنے کی وجوہات میں لذیزاور چکنائی والے کھانے، سالن کا شوربہ، گیس کے حامل مشروبات، شراب و دیگر چیزیں شامل ہیں۔ کمرے کے درجہ حرارت میں اچانک تبدیلی، گرم چیز کھانے کے فوراً بعد ٹھنڈا پانی یا مشروب پینے اور سگریٹ نوشی سے بھی ہچکی لاحق ہوسکتی ہے۔بعض لوگوں کو پریشانی اور زیادہ خوشی کے عالم میں بھی ہچکی لگ جاتی ہے۔ “

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہچکی روکنے کے لیے سانس روکنے یا کوئی اور طریقہ استعمال کر نے کی بجائے صرف اپنے کان کی لو (کان کا زیریں نرم حصہ) کو مسلنا شروع کر دیں، آپ کی ہچکی رک جائے گی۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ کان کی لو کو مسلنا کسی بھی اور طریقے کی نسبت زیادہ کارگر ثابت ہوا ہے، اور یہ سب سے آسان طریقہ بھی ہے۔

ذیل میں کچھ اور دیسی ٹوٹکے درج کیے جا رہے ہیں جن کے ذریعے آپ ہچکی کو روکنے کی کوشش کر سکتے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ اگر کوئی شخص ایسی بات کہہ دے جس سے ہچکی کا شکار مرض کو ذہنی جھٹکا لگے، اس سے بھی اسے ہچکی سے نجات مل جاتی ہے۔ پلاسٹک بیگ(شاپربیگ) میں سانس لینے سے خون میں کاربن ڈائی آکسائیڈ کی مقدار بڑھ جاتی ہے جس سے دیگر پٹھوں سمیت ڈایا فرام بھی سکون میں آ جاتا ہے اور ہچکی رک جاتی ہے۔ اس کے علاوہ اپنی زبان کے نیچے شہد رکھنے، لیموں چاٹنے اور سرخ مرچ کی چٹنی کھانے سے بھی افاقہ ہو جاتا ہے۔ بعض لوگ کہتے ہیں کہ اپنے گھٹنوں کو کھینچ کر سینے تک لیجانے اور کچھ دیر تک اسی حالت میں بیٹھے رہنے سے بھی ہچکی غائب ہو جاتی ہے۔اس کے علاوہ انگلی منہ میں ڈال کر زبان کی جڑ کو دبانے سے بھی ہچکی سے آرام آ جاتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت