پرائمری اور مڈل کے امتحانات میں بے قاعدگیوں کا سلسلہ جاری

پرائمری اور مڈل کے امتحانات میں بے قاعدگیوں کا سلسلہ جاری

لاہور( اپنے نامہ نگار سے) پنجاب ایگزامینیشن کمیشن ( پیک) کی انتظامیہ کی نااہلی، محکمہ سکولز ایجوکیشن کے ضلعی افسران کے باہمی روابط نہ ہونے کے برابر، امتحانی سنٹروں میں تعینات ایک لاکھ 16 ہزار نگران عملہ میں سے بیشتر کی ٹریننگ نہ ہونے پر پانچویں اور آٹھویں جماعت کے ہونے والے امتحانات میں بے قاعدگیوں کا سلسلہ جاری رہا۔اکثر امتحانی سنٹروں کے بارے میں سیکیورٹی گارڈز تک تعینات نہ تھے اور پولیس کی نفری بھی نہ ہونے کے برابر تھی اور سیکیورٹی کے لئے چوکیدار اور مالیوں کی خدمات لی گئی تھیں۔ اس حوالے سے پیک کے ڈائریکٹر عثمان لون کا موقف ہے کہ رول نمبرز سلپس میں درپیش شکایات کو ساتھ ساتھ دور کر دیا گیا ہے تاہم امتحانی سنٹروں اور پیپرز کے ٹائم کی بھی شکایت کو دور کیا جا رہا ہے۔ امتحانی سنٹروں کی چیکنگ کے لئے ڈی ایم اوز سمیت چار مختلف ایجنسیوں کے حوالے کی گئی ہے۔ اس میں کسی قسم کی کوتاہی پر ایکشن لیا جاتا ہے ۔

مزید : صفحہ آخر