ہوشاب ،تربت ،گوادر روڈ کا افتتاح ،دنیا کا مستقبل ارب آبادری والے ایشیائی خطے سے وابستہ ہے:نواز شریف

ہوشاب ،تربت ،گوادر روڈ کا افتتاح ،دنیا کا مستقبل ارب آبادری والے ایشیائی ...

ہوشاب (آن لائن،ما نیٹرنگ ڈیسک،اے این این ) وزیراعظم محمدنواز شریف نے کہا ہے کہ دنیا کا مستقبل تین ارب آبادی والے ایشیائی خطے سے وابستہ ہے ،یہاں جتنی سرمایہ کاری کی جائے گی اس کا فائدہ دوگنا ہو گا، گواد ر کو شاہراؤں کے راستے وسطی ایشائی ریاستی مما لک سے منسلک کرنا ایک خواب تھا جس کی تعبیر آج ہو رہی ہے ، ایسے خوابوں کی تعبیر اور قوموں کی تعمیر کوئی کھیل تماشا نہیں انشاء اللہ حقیقی انقلاب لائیں گے ،ٹھوس کام کے لئے نعروں کی نہیں بلکہ ثابت قدمی اور حکمت عملی کی ضرورت ہوتی ہے ، پاک فوج اور آرمی چیف کا ترقیاتی منصوبوں میں دلچسپی لینے پر شکریہ ادا کرتاہوں جنرل راحیل شریف کا کردار قابل تحسین ہے ، وہ حکومت کے ساتھ ملکر بلوچستان کی ترقی اور خوشحالی کے لیے کوشاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہا انہوں نے بدھ کے روز ہوشاب ،تربت ،گوادر روڈ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ۔ 193 کلو میٹر طویل ہوشاب ۔ تربت ۔ گوادر شاہراہ پر ساڑھے 13 ارب روپے کی لاگت آئی ہے اور اسے فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن نے تعمیر کیا ہے۔ افتتاحی تقریب میں گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی، وزیراعلیٰ بلوچستان سردار ثناء اﷲ زہری، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف، وفاقی وزیر سیفران عبدالقادر بلوچ، قومی سلامتی کے مشیر ناصر خان جنجوعہ، سابق وزیراعلیٰ بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ، سینیٹر میر حاصل خان بزنجو،چیئرمین این ایچ اے شاہد اشرف تارڑ،سینیٹر آغا شہباز ارکان قومی و صوبائی اسمبلی اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کینوازشریف نے کہا بلوچستان کے مختلف علاقوں میں سیکیورٹی صورتحال کی خرابی کے باعث شاہراؤں کی تعمیر کا کام تیزی سے جاری ہے مشکل حالات میں کام کرنے پرایف ڈبلیو او مبارکبا د کی مستحق ہے ، منصوبوں پر قربانیاں دینے والے اہلکاروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور انکے لواحقین سے مکمل ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں ،انہوں نے کہا کہ اس سے قبل بلوچستان اور گوادر میں ترقیاتی کاموں سے متعلق کاغذی باتیں ہوتی رہی لیکن موجودہ حکومت نے ان باتوں کو عملی طور پر کر کے دکھایا ہے ، تاریخ میں پہلی بار صوبے میں سڑکو ں کا جال بچھایا جار ہا ہے اور انفراسڑکچر کے علاوہ دیگر کام بھی تیزی سے جاری ہیں،شاہراؤں کے یہ منصوبے بلوچستان کی خوشحالی کی جانب ایک بڑا قدم ہے ،تاریخ میں پہلی بار بلوچستان کو اتنی اہمیت دی جارہی ہے آج یہاں برابری کی بنیاد ترقیاتی کام جار ی اور عروج پرہیں، بلوچستان کو دیگر صوبوں کی طرح ترقی یافتہ بنائیں گے ،انہوں نے کہا کہ ایسے کام جامع حکمت عملی اور قومی ویژن کے تحت ہوتے ہیں ،یہ قومی تعمیر کی جانب قدم ہے کوئی کھیل تماشا نہیں ،193کلومیٹر ہوشاب سے گوادر روڈ 9 ارب کی لاگت سے تعمیرکی گئی ہے ،شاہراؤں کی تعمیر سے سفر کے دورانیہ میں کمی ہو گی اور فاصلے ختم ہو ں گے ، لوگ ایک دوسرے کے قریب ہوں گے ،شاہراؤں کے یہ منصوبے پاکستان کے لئے بے پناہ فائدہ مند ہیں اور ان کی تکمیل سے حقیقی انقلاب لائیں گے ،انہوں نے کہا کہ شاہراؤں کے منصوبوں پر خصوصی دلچسپی اور جنرل راحیل شریف کاکردار قابل تحسین ہے ،وزیراعظم نے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ خضدار روڈ کو دو رویہ بسمی ،خضدار ،اور سراب گوٹھ ، بیسلہ آوران اور ہوشاب ہائی وے کی تعمیر کا جلد شروع کیا جائے گاژوب ، مغل کوٹ روڈ کو موٹروے کا درجہ دیں گے ،انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں شاہراؤں کے نیٹ ورک وسطی ایشائی ریاستوں کے لیے تجارتی گزر گا ہ بنے گی ،گوادر کو شاہراؤں کے راستے وسطی ایشیاء سے منسلک کریں گے ،انہوں کہا کہ وسطی ایشیائی ممالک میں سے بیشتر کی یہ خواہش ہے کہ وہ گوادر کے زریعے اپنی تجارت کریں ازبکستان تاجکستان ، اور کرغزستان ، گوادر پورٹ کو استعمال کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں ،وزیراعظم نے کہا کہ پشاور سے جلال آبا د تک شاہراہ کی تعمیر کا کام تیزی سے جاری ہے اور افغانستان او ر پاکستان ملکر اس روڈ کو کابل تک پہنچائیں گے ،جس کا فائد صرف افغانستان او ر پاکستان کو ہی نہیں بلکہ خطے کے دیگر ممالک کو بھی ہو گا ۔وزیراعظم نے کہا کہ دنیا کا مستقبل 3ارب آبادی کے حامل اس خطے وابستہ ہے یہاں جتنی بھی سرمایہ کاری کی جائے گی اس کا زیادہ سے زیادہ فائد ہو گا ،انہوں نے کہا کہ ملکی ترقی کے لیے ہر شعبہ میں تیزی سے کام کررہے ہیں ،ملک میں لوڈشیڈ نگ کے خاتمہ کے لیے پاکستان کے مختلف علاقوں میں بجلی کے منصوبوں پر کام شروع ہے اور کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے بھی زیر تعمیر ہیں ،دریا ئے سندھ ،داسو ، دیامر اور بونجی پر بجلی کے منصوبے شروع ہیں اور ہر منصوبے سے 4ہزار میگاواٹ بجلی میسرہو گی جس سے ملک میں 2018تک بجلی کی قلت ختم ہو جائے گی اور بجلی کی پیدوار وافر ہو گی ،وزیراعظم نے کہا کہ ہمارا مقصد صر ف بجلی پیدا کرنا ہی نہیں بلکہ پاکستان میں سستی اور زیادہ بجلی پیدا کرنا ہے ،پاور کول منصوبوں میں تھر کا کوئلہ استعمال کریں گے جس سے بجلی کی پیدواری لاگت کم ہو گی،صنعت کاروں اور کسانوں کو بجلی سستی فراہم ہو گی۔انہوں نے کہا کہ ملک کے معاشی اعشاریے بہتری کی جانب گامزن ہیں اور دنیا کے ممالک ہماری معاشی بہتری کا اعتراف کررہے ہیں ،مستقبل میں گوادر پاکستان کا سب سے زیادہ اہمیت کا حامل شہر ہو گا یہاں بین الاقوامی معیار کے ایئرپورٹ ، ہسپتال ،یونیورسٹی ، سمیت ہر قسم کی سہولیا ت فراہم کی جائیں گی، انہوں نے کہا کہ 1999میں ہم نے موٹروے بنائی اور آج بھی ہم ہی ملک میں سٹرکوں کے جال بچھا رہے ہیں ، کراچی لاہور ، کراچی حیدرآباد، موٹر وے زیر تعمیر ہے اور کراچی سے سکھر تک موٹروے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں معدنیات کے خزانے ہیں اگر انکا استعمال نیک نیتی سے کیا جائے تو خطے میں کبھی مالی کمی نہ ہو ، لیکن بدقسمتی سے ماضی کی حکومت نے بلوچستان کے وسائل کو ذاتی مفادات کی خا طر استعمال کیا جسکی وجہ سے مثبت نتائج برآمد نہیں ہوئے ،بلوچستان کے خزانوں کو استعمال کرکے یہاں خوشحالی پھیلائیں گے ،انہوں نے کہا کہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف بھی قدرتی وسائل کو استعمال کرنے کے منصوبوں کو شروع کرنے میں خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں اور پاک فوج نے بلوچستان سمیت ملکی ترقی کے لیے حکومت سے ملکر چلنے کا فیصلہ کیا ہے ،دریں اثنا وزیراعظم نواز شریف نے آرمی چیف کے ہمراہ گاڑی میں بیٹھ کر سڑک کا معائنہ کیا اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے گاڑی ڈرائیو کی اور آرمی چیف خود گاڑی چلا کر سڑک کا افتتاح کرنے کے مقام پر پہنچے، وزیراعظم نے آرمی چیف کے ہمراہ ہوشاب ، تربت ، گوادر موٹروے ایم8 کا افتتاح کیا

مزید : کراچی صفحہ اول