حکومت نے 2015ءمیں پٹرولیم مصنوعات سے 555 ارب روپے ٹیکس اکٹھا کیا، عوام کو فوائد منتقل نہ کئے

حکومت نے 2015ءمیں پٹرولیم مصنوعات سے 555 ارب روپے ٹیکس اکٹھا کیا، عوام کو فوائد ...
حکومت نے 2015ءمیں پٹرولیم مصنوعات سے 555 ارب روپے ٹیکس اکٹھا کیا، عوام کو فوائد منتقل نہ کئے

  

اسلام آباد (آن لائن) وفاقی حکومت نے گزشتہ مالی سال کے دوران پٹرولیم مصنوعات سے 555 ارب روپے اکٹھے کئے جو ٹیکس ریونیو کا پانچواں حصہ بنتا ہے اور ایسا تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی اور درآمدات کے باوجود ہوا ہے۔ میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ حکومت نے تیل کی قیمتوں میں کمی کے فوائد عوام کو نہ منتقل کئے اور جنرل سیلز ٹیکس اور ڈیوٹیز میں اضافہ کیا جنرل سیلز ٹیکس، کسٹم ڈیوٹیز اور پٹرولیم لیوی کی مد میں اکٹھے کئے گئے 555 ارب روپے گزشتہ مالی سال سے 6.6 فیصد زائد تھے اس سے حکومت کے اس دعویٰ کی حقیقت سامنے آئی ہے کہ تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی نے ریونیو کے اکٹھے کرنے کے عمل کو متاثر کیا ہے۔ 2014-15 کے خاتمے تک خام تیل کی قیمتوں میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 50 فیصد کمی دیکھنے میں آئی۔

مزید : اسلام آباد