سنی لیون نیم برہنہ تصویر انٹرنیٹ پر وائرل ہونے پر برہم، فوٹو شاپ کے ذمہ دار کا پتہ لگاوں گی: اداکارہ

سنی لیون نیم برہنہ تصویر انٹرنیٹ پر وائرل ہونے پر برہم، فوٹو شاپ کے ذمہ دار ...
سنی لیون نیم برہنہ تصویر انٹرنیٹ پر وائرل ہونے پر برہم، فوٹو شاپ کے ذمہ دار کا پتہ لگاوں گی: اداکارہ

  

ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک )بے باک اداکاری سے شہرت پانے والی بالی ووڈ کی اداکارہ سنی لیون نے جب سے بھارتی فلم انڈسٹری میں انٹری دی ہے تب سے ہی ’تنازعات‘ کی زینت بنی ہوئی ہیں۔نی لیون کے حالیہ موضوع ِ بحث بننے کی سب سے بڑی وجہ ان کی نئی فلم ’مستی زادے ‘ کی ریلیز ہے۔ ایک سٹار ہونے کے ناطے اور خصوصاََ ایسی خاتون کے لئے قطعی طور پر آسان نہیں ہے جو اکثر اوقات تنازعات میں گھری رہتی ہے۔

بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق سنی لیون کی ساحل سمندر پر لیٹے ہوئے کی نیم برہنہ تصویر انٹرنیٹ پر کافی ِگردش کر رہی ہے۔ دیکھنے میں سنی لیون کی یہ نیم برہنہ تصویر فلم ’ون نائیٹ سٹینڈ‘کے پوسٹر کی لگتی ہے۔ تاہم جیسا لگتا ہے ویسا نہیں ہے۔ سنی لیون نے اس کی وضاحت کے لئے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئیٹر کا سہارا لیا ہے اور اپنے پیغام میں بتایا ہے کہ یہ تصویر ان کی نہیں ہے بلکہ تصویر پر ان کا (یعنی سنی لیون)کا چہرہ فوٹو شاپڈ کیا گیا ہے۔ سنی لیون نے بعد ازاں ایک ریڈیو انٹرویو میں کہا کہ وہ اس بات کی تہہ میں پہنچے گی کہ اس کا ذمہ دار کون ہے۔ ایسا پہلی بار نہیں ہے کہ بے باک اداکاری سے مشہور اداکارہ سنی لیون کسی سے ناراض ہوئی ہوں۔

مزید : تفریح