رواں سال پاکستان کی معاشی ترقی 4 اعشاریہ 5 فیصد رہنے کا امکان ہے، آئی ایم ایف

رواں سال پاکستان کی معاشی ترقی 4 اعشاریہ 5 فیصد رہنے کا امکان ہے، آئی ایم ایف
رواں سال پاکستان کی معاشی ترقی 4 اعشاریہ 5 فیصد رہنے کا امکان ہے، آئی ایم ایف

  

دبئی(مانیٹرنگ ڈیسک) آئی ایم ایف نے پاکستان کی معاشی ترقی کے حوالے سے کہا ہے کہ پاکستان میں افراط زر کی شرح میں نمایاں کمی آئی رواں سال معاشی ترقی 4 اعشاریہ 5 فیصد رہنے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق دبئی میں وزارت خزانہ اور آئی ایم ایف میں ہونے والے مذاکرات کے بعد آئی ایم ایف مشن چیف کا کہنا تھا کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں کمی سے حکومت کو سہارا ملا اورپاکستان کی معیشت نے ترقی کی جبکہ پاکستان نے زرمبادلہ کے ذخائر کا ہدف بھی پورا کرلیاہے ۔ تیل کی قیمتوں میں کمی سے زرمبادلہ کے ذخائر میں 70 کروڑ ڈالر کی ترقی ہوئی ہے ، دسمبر 2015 میں زرمبادلہ کے ذخائر 15 ارب 90 کروڑ ڈالر تھے جو 20 ارب ڈالر سے بڑھ چکے ہیں۔

چیف مشن کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان رواں برس 5 فیصد معاشی ترقی کا ہدف حاصل نہیں کرپائے گا، پاکستان کی معاشی ترقی کا ہدف چار اعشاریہ پانچ فیصد رہے گا۔ پاکستان کو ٹیکس نیٹ مزید وسیع کرنا ہوگا اور کاروباری سرگرمیوں کے لیے ماحول بہتر بنانا ہوگا۔

مزید : بزنس