خواتین کی عزت کرتا ہوں، مجھ پر لگائے گئے الزامات غلط، مذکورہ خاتون سے دو تین سال سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی: سردار سنگھ

خواتین کی عزت کرتا ہوں، مجھ پر لگائے گئے الزامات غلط، مذکورہ خاتون سے دو تین ...
خواتین کی عزت کرتا ہوں، مجھ پر لگائے گئے الزامات غلط، مذکورہ خاتون سے دو تین سال سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی: سردار سنگھ

  

نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی ہاکی ٹیم کے کپتان سردار سنگھ نے برطانیہ کی خواتین ہاکی ٹیم کی کھلاڑی ”اشپال بھوگل“ کی جانب سے جنسی استحصال سمیت عائد کئے گئے تمام الزامات کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان کی مذکورہ خاتون کیساتھ گزشتہ دو تین سال سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی۔

صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے سردار سنگھ کا کہنا تھا کہ وہ خواتین کی بہت عزت کرتے ہیں اور وہ ایسا کرنے کا سوچ بھی نہیں سکتے جو الزامات اشپال بھوگل کی جانب سے لگائے گئے ہیں۔ سردار سنگھ نے مزید کہا کہ اس کے ٹوئٹر اکاﺅنٹ کا غلط استعمال کیا گیا اور وہ فی الوقت صرف اور صرف ہاکی پر متوجہ ہیں لیکن جو کچھ بھی کیا جا رہا ہے وہ صرف ان کی توجہ ہٹانے کیلئے کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے اس موقع پر جنسی استحصال، ذہنی اور جسمانی ہر طرح کے تشدد کی سختی سے تردید کی۔

سردار سنگھ کا کہنا تھا کہ اگرچہ وہ اشپال بھوگل کے بہترین دوست رہے ہیں لیکن اس کے باوجود گزشتہ دو تین سال سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی۔ سردار سنگھ نے کہا کہ” ہم اچھے دوست تھے اور ملاقات کرتے تھے، اشپال سے میری ملاقات لندن اولمپکس سے پہلے فیس بک کے ذریعے ہوئی تھی لیکن ان اولمپکس کے دوران اس سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی“۔

واضح رہے کہ برطانیہ کی خواتین ہاکی ٹیم کی ایک کھلاڑی اشپال بھوگل نے بھارت کی ہاکی ٹیم کے کپتان سردار سنگھ کے خلاف جنسی استحصال پر مقدمہ درج کرنے کیلئے تحریری درخواست دے رکھی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ سردار سنگھ اسے جنسی، ذہنی اور جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔

21 سالہ خاتون کھلاڑی نے موقف اختیار کیا ہے کہ اس کی سردار سے ملاقات 2012ءمیں لندن اولمپکس کے دوران ہوئی تھی اور ان کی منگنی بھی ہوئی جو 4 چار سال تک قائم رہی اور اس دوران 2015ءمیں انہوں نے سردار کے کہنے پر بچہ بھی گرایا۔ خاتون کھلاڑی نے کہا کہ ”میں سردار سے لندن اولمپکس کے دوران ملی جس کے بعد ہماری جان پہچان ہوئی۔ ہماری منگنی ہو گئی میں 2015ءمیں امید سے بھی ہوئی۔ سردار نے مجھے بچہ گرانے کو کہا اور میں نے اپنی خواہش کے برعکس سردار کی یہ بات مانتے ہوئے بچہ گرا دیا“۔

لدھیانا پولیس کمشنر پی ایس امراننگال نے کہا ہے کہ اگرچہ سردار سنگھ کے خلاف تحریری درخواست جمع کرائی گئی ہے لیکن ابھی تک مقدمہ درج نہیں کیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ” درخواست کنندہ نے جنسی استحصال سمیت دیگر الزامات عائد کئے ہیں اور درخواست کی تصدیق کی جا رہی ہے۔ پولیس کمشنر نے بتایا کہ خاتون کا کہنا ہے ” بچہ گرائے جانے کے بعد سردار سنگھ نے اسے اہمیت دینا ختم کر دی اور پھر شادی سے ہی انکار کر دیا۔ سردار نے مجھے جذباتی، جسمانی اور ذہنی طور پر تشدد کا نشانہ بنایا“۔

مزید : کھیل