آئی ایس آئی ہیڈکوارٹرز میں اجلاس ، دہشتگردی کے مکمل خاتمے تک آپریشن جاری رکھنے پر اتفاق ، پوری قوم اور حکومت فوج کے پیچھے کھڑی ہے :وزیر اعظم نواز شریف

آئی ایس آئی ہیڈکوارٹرز میں اجلاس ، دہشتگردی کے مکمل خاتمے تک آپریشن جاری ...
آئی ایس آئی ہیڈکوارٹرز میں اجلاس ، دہشتگردی کے مکمل خاتمے تک آپریشن جاری رکھنے پر اتفاق ، پوری قوم اور حکومت فوج کے پیچھے کھڑی ہے :وزیر اعظم نواز شریف

  

اسلا م آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعظم میاں نواز شریف نے کہا کہ سیکیورٹی اداروں کی کوششوں سے ملک میں امن و امان بہتر ہوا، پوری قوم اور حکومت فوجی جوانوں کے پیچھے کھڑی ہے، ہر قسم کے دشمنوں کو مل کر شکست دیں گے۔

نجی ٹی وی کے مطابق آئی ایس آئی ہیڈ کوارٹر  اسلام آباد میں سیکیورٹی امور پر اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا،اجلاس میں وزیراعظم اور آرمی چیف کو سیکیورٹی امور، ملک کو درپیش اندرونی و بیرونی خطرات، دہشتگردوں کے نیٹ ورکس اور روابط، عدم استحکام پیدا کرنیوالی خفیہ ایجنسیوں اور سہولت کاروں پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اہم ترین اجلاس میں پاک افغان سرحدی امور اور آئندہ کے لائحہ عمل پر بھی غور کیا گیا۔وزیراعظم نواز شریف نے آئی ایس آئی، فوج اور دیگر انٹیلی جنس اداروں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ فوج اور انٹیلی جنس اداروں کا کردار قابل تحسین ہے، سیکیورٹی اداروں کی کوششوں سے ملک میں امن و امان بہتر ہوا، پوری قوم کو آئی ایس آئی پر فخر ہے۔انہوں نے کہا کہ   آئی ایس آئی افسران اور جوانوں نے بے شمار کامیابیاں حاصل کیں، قوم اور حکومت فوجی جوانوں کے پیچھے کھڑی ہے، ہر قسم کے دشمنوں کو مل کر شکست دیں گے، پاکستان کو محفوظ اور خوشحال ملک بنائیں گے۔اس موقع پر آئی ایس آئی کے اعلیٰ حکام نے وزیر اعظم نواز شریف ،آرمی چیف جنرل راحیل شریف اور دیگر کو  سیکیورٹی امور، ملک کو درپیش اندرونی و بیرونی خطرات، دہشتگردوں کے نیٹ ورکس اور روابط، عدم استحکام پیدا کرنیوالی غیر ملکی  خفیہ ایجنسیوں اور ان کےسہولت کاروں پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔آئی ایس پی آر ترجمان کے مطابق اجلاس میں پاک افغان بارڈرمینجمنٹ اور آئندہ کے لائحہ عمل کے بارے میں بھی بات کی گئی۔اجلاس کے دوران آرمی چیف کا کہنا تھا کہ دہشتگردوں کو باہر سے فنڈنگ اور اندر سے مدد مل رہی ہے۔جنرل راحیل شریف نے اس امر پر زور دیا کہ دہشت گردوں کو بیرونی طور پر مالی اعانت اور داخلی طور پر سہولت فراہم کی جاتی ہے، انہوں نے ملک میں دیرپا امن کو یقینی بنانے کیلئے آپریشن ضرب عضب اور انٹیلی جنس پر مبنی جاری آپریشنز (آئی بی اوز) میں حاصل ہونے والی کامیابیوں کو تقویت دینے کیلئے ملک بھر میں کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زور دیا۔ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے امن کے قیام کے لیے خفیہ معلومات کی بنیاد پر ملک بھر میں آپریشن جاری رکھنے پر زور دیتے ہوئے  کہا کہ دھشت گردوں کو باہر سے مالی مدد اور اندر سے سہولت ملتی ہے ۔ اس موقع پر اتفاق کیا گیاکہ آپریشن ضرب عضب اور انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن ملک میں قیام امن کا مستقل حل ہیں، انہیں جاری رکھا جائے گا ۔سکیورٹی کی صورتحال سے متعلق فوجی اور سول قیادت کے اعلیٰ سطح کے اجلاس میں غیر ملکی خفیہ ایجنسیوں کے پاکستان میں مفاد اور ملکی عدم استحکام میں اُن کے کردار جائزہ  بھی لیا گیا۔اجلاس میںوفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، مشیر قومی سلامی جنرل(ر) ناصر جنجوعہ سمیت دیگر بھی شریک

تھے ۔

مزید : قومی /اہم خبریں