وہ ملک جس کے پاس دنیا میں تیل کے سب سے زیادہ ذخائر ہیں لیکن پھر بھی اسے دوسرے ممالک سے خریدنے پر مجبور ہے

وہ ملک جس کے پاس دنیا میں تیل کے سب سے زیادہ ذخائر ہیں لیکن پھر بھی اسے دوسرے ...
وہ ملک جس کے پاس دنیا میں تیل کے سب سے زیادہ ذخائر ہیں لیکن پھر بھی اسے دوسرے ممالک سے خریدنے پر مجبور ہے

  

کراکس (نیوز ڈیسک) براعظم جنوبی امریکا کے ملک وینز ویلا کے تیل کے ذخائر دنیا کے کسی بھی اور ملک سے زیادہ ہیں، لیکن حیرت کی بات ہے کہ 298 ارب بیرل کے ثابت شدہ ذخائر کا مالک یہ ملک امریکا سے تیل خریدنے پر مجبور ہے۔

امریکی ٹی وی ”سی این این“ کے مطابق گزشتہ ہفتے امریکا سے ایک بحری جہاز تقریباً 5 لاکھ بیرل تیل لے کر کریبین سمندر میں واقعہ یورا کاﺅ جزیرے پر پہنچا، جہاں سے اسے وینز ویلا منتقل کیا جائے گا۔ وینز ویلا کے اپنے تیل کے ذخائر روس ، ایران اور حتیٰ کہ سعودی عرب سے بھی زیادہ ہیں، جبکہ جس ملک سے یہ تیل خرید رہا ہے یعنی امریکا سے اس کے تیل کے ذخائر تقریباً 8 گنا زیادہ ہیں۔ دنیا میں سب سے زیادہ تیل کے مالک ملک کو آخر امریکا کا تیل خریدنے کی کیا ضرورت پیش آگئی؟

مزید جانئے: ایران نے ایک ایسے ملک کے ہزاروں شہری شام میں لڑنے کیلئے پہنچادئیے کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا، ایسا ملک کہ نام جان کر آپ کو بھی بے حد حیرت ہوگی

آئل مارکیٹ کی تجزیہ کار نیلوفر سعیدی بتاتی ہیں کہ وینز ویلا کے پاس تیل کے وسیع ترین ذخائر تو موجود ہیں لیکن اس کا خام تیل انتہائی بھاری ہے اور اس کی صفائی کرنا خاصا مشکل کام ہے۔ وینز ویلا کو اپنے بھاری خام تیل میں دوسرے ملکوں سے لیا گیا ہلکا خام تیل شامل کرنا پڑتا ہے تاکہ اس کی کوالٹی کو متوازن کیا جاسکے۔ اس سے پہلے وینز ویلا روس، انگولا اور نائیجیریا سے ہلکا خام تیل درآمد کررہا تھا، لیکن اس پر عائد امریکی پابندیوں میں حال ہی میں کی جانے والی نرمی کے بعد وینز ویلا کے لئے افریقہ کی بجائے امریکا سے ہلکا خام تیل درآمد کرنا زیادہ فائدہ مند ہو گیا ہے۔ نیلوفر سعیدی کے مطابق یہی بنیادی وجہ ہے کہ دنیا میں سب سے زیادہ تیل رکھنے والا ملک وینز ویلا اپنے سے 8 گنا کم ذخائر رکھنے والے ملک امریکا سے خام تیل درآمد کررہا ہے۔

وینز ویلا کی معیشت تیل کی برآمد پر بہت زیادہ انحصار کرتی ہے اور عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت میں ہونے والی غیر معمولی کمی نے اس کی معیشت کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ معاشی تجزیہ کار وینز ویلا کی معیشت کو اس وقت دنیا کی بدترین معیشت بھی قرار دے رہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی