لوکل باڈی ایکٹ ،میئر اور چیئرمین کا انتخاب خفیہ بیلٹ کی بجائے اوپن،ڈپٹی میئرز اور وائس چیئرمین کی تعداد میں بھی اضافہ کر دیا گیا

لوکل باڈی ایکٹ ،میئر اور چیئرمین کا انتخاب خفیہ بیلٹ کی بجائے اوپن،ڈپٹی ...
لوکل باڈی ایکٹ ،میئر اور چیئرمین کا انتخاب خفیہ بیلٹ کی بجائے اوپن،ڈپٹی میئرز اور وائس چیئرمین کی تعداد میں بھی اضافہ کر دیا گیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب اسمبلی میں لوکل گورنمنٹ کے پاس کردہ دوترامیمی مسودات قوانین کے مطابق اب پنجاب میں بلدیاتی اداروں کے میئر اور چیئرمین کا انتخاب خفیہ بیلٹ کی بجائے اوپن ڈویژن سے ہو گا۔ خواتین کی مخصوص نشستوں پر انتخاب براہ راست کی بجائے متناسب نمائندگی کی بنا ءپر ہوگا ۔ ڈپٹی میئرز اور وائس چیئرمین کی تعداد میں بھی اضافہ کر دیا گیا ۔

مقامی نجی  ٹی وی کے مطابق  ایسی میونسپل کارپوریشن جس کی آبادی دس لاکھ سے زائد ہو وہاں چار ڈپٹی میئر ہوں گے اور مابعد ہر پانچ لاکھ آبادی کی اضافی آبادی کےلئے دو اضافی ڈپٹی میئر ہوں گے ۔ مسودات قوانین کے مطابق کسان ، مزدور ، ٹیکنوکریٹ کی سیٹوں کی تعداد دو مزدور کی بجائےکم سے کم دو اور زیادہ سے زیادہ دس ہو گی۔ ٹیکنوکریٹ کے لئے تعلیمی قابلیت بی اے کر کے تجربہ تین سال کر دیا گیا۔ ایم اے تعلیم ہونے پر ٹیکنو کریٹ سیٹ پر تجربہ درکار نہیں ہو گا۔اگر مقامی حکومت میں خواتین، کسانوں ، ورکرز، یوتھ، ٹیکنو کریٹس یا غیر مسلم کی کوئی مخصوص نشست کسی رکن کی وفات ، استعفیٰ یا نا اہلی کی وجہ سے خالی ہو جائے تو ذیلی دفعہ( 1)کے تحت الیکشن کمیشن کے پاس جمع کرائی گئی امیدواران کی فہرست میں ترجیح کے اعتبار سے اگلے شخص کے ذریعے پر کی جائے گی ۔

مزید : لاہور