ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی کا ڈی آر سی ممبران سے اجلاس

ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی کا ڈی آر سی ممبران سے اجلاس

صوابی(رپورٹ: محمد شعیب) ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی کا ڈی آر سی ممبران سے اجلاس ہوا ۔ اجلاس میں ڈی آر سی کے سیکرٹری جنرل محمد غلام باچانے اس سال میں ضلع صوابی میں قتل و اقدام قتل اوردیگر گھریلوں ناچاکی،اراضی تنازعات کی رپورٹ پیش کی۔جس کے مطابق ڈی آر سی میں موصول شدہ شکایات کی تعداد میں مسلسل اضافہ حاص طور پر 2018اور 2019 کے درمیان 95فیصد سے زائدگھریلوں ناچاکی،اراضی تنازعات ،رقم تنازعات و دیگر چھوٹے موٹے تنازغات کے پر امن حل میں ڈی آر سی کی بڑھتی ہوئی مقبولیت اور افادیت ایک واضح ثبوت ہیں۔ ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی کی نگرانی میں ڈی آر سی کی ممبران نے اس سال میں 1784درخواستوں میں1619تنازعات بڑی خوش اسلوبی کے ساتھ کیے جبکہ165درخواستیں زیر غور ہے ، ڈی آر سی صوابی کے ذریعے جو تنازغات حل ہوئے ہیں۔ اس میں 666 تنازعہ رقم ، 302 تنازعات گھریلو ں ناچاکی ، 571تنازعہ اراضی اور 6 تنازعے خونی پرانی دشمنی شامل ہیں۔ جس میں کئی سالوں سے چلی آرہی قتل مقاتلی سالوں دشمنیاں دوستی میں تبدیل کر دئیے ہیں ۔اس میں پراپرٹی کے کروڑوں روپے کے تنازعات حل کر دئیے ہیں۔چاروں سرکلوں میں ڈی آر سی نے انصاف پر مبنی فیصلے کرتے ہوئے سرکل صوابی ڈی آر سی نے 591درخواستوں میں سے 462فیصلے کرکے تنازعات حل کیے ،سرکل چھوٹا لاہور ڈی آر سی نے 548درخواستوں میں سے 539تنازعات حل کیے ،ڈی آر سی رزڑ نے 349درخواستوں سے 328تنازعات حل کیے جبکہ ڈی آر سی ٹوپی نے 296درخواستوں میں سے 290تنازعات خوش اسلوبی ے ساتھ حل کرکے دو فریقین کے مابین دوریاں و نفرتیں ختم کرکے بھائی بھائی بننے میں نمایاں کردار ادا کیا ۔ٹوٹل 1784درخواستوں میں سے 1619تنازعات حل کرکے ایک ریکارڈ ہے جبکہ باقی 165درخواستوں پر زیر غور جاری ہیں ڈی آر سی کو فعال بنا دیا گیاہے جس کے اچھے نتائج سامنے آئے ہیں اور ابتک ہزاروں سے اوپر چھوٹے بڑے تنازعات کا باہمی رضامندی سے حل نکالا گیاہے۔ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی نے ممبران سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ پختون معاشرے میں جرگہ بڑی بڑی خاندانی چپقلشوں اور تصفیوں کے حل میں ایک بار آور عنصر ہے جس کی حقیقت سے انکار ممکن نہیں صوابی میں ڈی آر سی اپنے مقاصد کی تکمیل کی طرف تیزی سے کوشاں ہے ڈی آر سی کی سلسہ میں آفسران بالا کی ولولہ انگیز قیادت میں ضلع صوابی میں ڈی آر سی میں مختصر وقت میں قتل و اقدام قتل ،مستورات تنازعہ ،جائیداد و کاروباری لین دین کے تنازعات حل کرکے تاریخ رقم کردی ہیں،ڈی آر سی دفتر کے لئے ہرقسم ریلیف دیں گے جو ڈی آر سی ممبران اور عوام کی سہولت کے لئے استعمال ہوتے ہیں ضلع صوابی نے صوبہ میں نمایا ں کارکردگی کا مظاہرہ کرکے ایک بار پھر امن کے پیامبر کا کردارکردیا،ڈی آر سی کی قیام سے اب تک عوام کے جتنے راضی نامے ہو چکے ہیں وہ تاریخ سازا ورہ قابل ستائش ہیں،ڈی آر سی کے قیام سے بڑے بڑے تنازعات کو فیصلہ باہمی رضامندی سے کیا گیا جس سے صوابی کے امن میں اضافہ اور قتل مقاتلے کی دشمنیوں میں 40%کمی آئی ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر