پیسکو کنسٹرکشن امان گڑھ میں آوے کا آوا بگڑا ہوا ہے،حاجی لال زادہ

پیسکو کنسٹرکشن امان گڑھ میں آوے کا آوا بگڑا ہوا ہے،حاجی لال زادہ

نوشہرہ(بیورورپورٹ) پیسکو کنسٹرکشن پشاور ڈویژن کا نوشہرہ امان گڑھ گریڈ سٹیشن میں واقع اور پیسکو کنسٹرکشن مردان ڈویژن کا دوبیان گریڈ سٹیشن میں پڑا سرکاری سامان ، سب سٹورز لائن سپرنٹنڈنٹس، ورک چارج، ڈرائیورز، لیبرز اور گریڈ چوکیدار(گیٹ انچارج) کی ملی بھگت سے سٹورز میں پڑے سامان ، سٹورز احاطے ہی میں فروخت کرنے کا الزام جبکہ ٹھیکیدار کی گاڑی سٹور کے گیٹ کے اندر بھی جانے نہیں دیتی پراجیکٹ ڈائریکٹر پیسکو کے زیر انتظام تمام سٹورز میں آواے کا آوا ہی بگڑا ہوا ہے اسی لئے پیسکو چیف ایگزیکٹیو، ڈائریکٹر ایف آئی اے، قومی احتساب بیورو کے چیئرمین اور وزیراعظم پاکستان عمران خان از خود نوٹس لے کر پیسکو کنسٹرکشن کے سٹورز کے کرپٹ عناصر کے خلاف کاروائی کرکے قومی خزانے کو بے دردی سے لوٹنے والوں کو کیفر کردار تک پہنچائیں ا ن خیالات کااظہار واپڈا کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن کے صدر حاجی لال زادہ خان نے اپنے اخباری بیان میں کیا ہے انہوں نے کہا کہ پیسکو کنسٹرکشن ڈویژن پشاور کا نوشہرہ امان گڑھ گریڈ سٹیشن کے مقام پر واقع سب سٹورز میں لائن سپرنٹنڈنٹس، ورک چارج، ڈرائیورز، لیبرز اور گیٹ انچارج نے سرکاری سامان کو شیر مادر سمجھا ہوا ہے اور سٹور ہی میں مال ہاتھوں ہاتھ فروخت کیاجاتا ہے اور اپنے ریٹ مقرر کئے ہیں جس میں پول 1000 روپے کنٹریکٹر تار فی ڈرم 5 ہزار روپے، جبکہ گیٹ انچارج سامان کے لئے لائے ہوئے ٹرک ڈرئیور سے 10 ہزار روپے فی گاڑی وصول کرتا ہے اور پیسکو کنسٹرکشن کے ٹھیکیداروں کی گاڑی پر سٹور جانے کیلئے پابندی لگا دی جاتی ہے اس تمام غیرقانونی خرید وفروخت سے ماہانہ قومی خزانے کو لاکھوں کا نقصان پہنچتا ہے لیکن کوئی پرسان حال نہیں انہوں نے مزید کہا کہ مردان پیسکو کنسٹرکشن ڈویژن کے زیر اہتمام دوبیان گریڈ سٹیشن میں واقع سٹور کی بھی یہی صورتحال ہے اور دھڑا دھڑ سرکاری سٹوروں سے سامان مولی گاجر کی طرح فروخت کیاجارہا ہے انہوں نے کہا کہ ایم ایم والے ناقص میٹریل سے بنا ہوا سامان سپلائی کرتے ہیں کیونکہ ایک کروڑ روپے کی سپلائی میں افسران 35 سے 40 فیصد رشوت وصول کرتے ہیں یہی وجہ ہے کہ متعلقہ کارخانوں کے مالکان ناقص میٹریل سے بنا ہوا سامان سپلائی کرتے ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پی سی پول کی تنصیب پر پابندی لگا دی جائے کیونکہ یہی پی سی پول لیبر کیلئے جان لیوا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر