طور خم بارڈر 24گھنٹے کھلا رکھنے سے تجاوزات کو فروغ ملے گا: علامہ نور الحق قادری

طور خم بارڈر 24گھنٹے کھلا رکھنے سے تجاوزات کو فروغ ملے گا: علامہ نور الحق قادری

خیبر (عمران شنواری ) پاک افغان بارڈر طورخم چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے وزیراعظم کے حکم کو بارڈر کے دونوں اطراف کے عوام نے خیبر مقد م کیا ،وزیراعظم عمران خان ٹویٹ کے بعد وفاقی کابینہ اجلاس میں وفاقی وزیر مذہبی امور ڈاکٹر علامہ نورالحق قادری نے بارڈر چوبیس گھنٹے رکھنے پر پاکستان اور افغانستان کے عوام کی طرف سے بہترین پذایرئی ملنے پر وزیر اعظم کو آگا ہ کیااور کابینہ اجلاس میں تفصیل سے بات کی اس سلسلے میں گز شتہ روز وفاقی وزیر مذہبی امور ڈاکٹر علامہ نورالحق قادری سے جب پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ وفاقی کابینہ اجلاس میں وزیراعظم اور کابینہ کا بتا یا گیا کہ طورخم بارڈر چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے سے افغانستان اور پاکستان کے عوام میں مذید دوستیاں پیار اور محبتیں بڑھ جا ئیں گے اور ایک دوسرے سے نزدیک ہو جائیں گے جبکہ ٹرانسپوٹروں کے مشکلات بھی کم ہو جائیں گے نورالحق قادری نے کہا کہ چوبیس گھنٹے بارڈر کھلا رکھنے سے تجارت کو فروغ ملے گا اور چھوٹے تاجروں کا بہت فائد ہو گا وہ مذید کو شش کرتے ہیں کہ بارڈر پر تاجروں اور تجارت کیلئے آسانیاں پیدا کریں انہوں نے کہا کہ کابینہ اجلاس میں یہ بھی بتا یا گیا کہ باڑدرپر آن اریولاور آن لائن ویزہ شروع کریں تاکہ آنے جا نے والے مسافروں کو ویزہ میں آسانی پیدا ہو سکے اور قانونی طریقے سے زیا دہ لوگوں کا آنا جانا ہو سکے انہوں نے کہا کہ بارڑ چوبیس گھنٹے کھلا رکھنے وزیراعظم عمران خان کے اعلان کے بعد گزشتہ روز پاکستان کے سیکٹری خارجہ انسپکٹر جنرل فرنٹیر کور ودیگر اعلی حکام نے طورخم بارڈر کا دورہ کیا اور جائزہ لیا گیا اس پر کام شروع ہو گیا ہیں اور جلد چوبیس گھنٹے بارڈر عوام کی سہولت کیلئے کھول دی جائی گی وفاقی وزیر ڈاکٹر علامہ نورالحق قادری نے کہا کہ طورخم میں خوگا خیل قوم کے اراضی کے حوالے سے گورنر خیبر پختونخوا اور ڈی سی خیبر سے بات کی ہیں انہیں بتا یا گیا کہ خوگا خیل قوم کے مشترکہ اراضی کو کسی قسم نقصان نہیں پہنچنا چاہئے اور این ایل سی کے ساتھ جو معاہدے کئے گئے ہیں این ایل سی اس پر عمل کریں اس سلسلے میں جو مشکلات ہیں وہ خوگاخیل قوم کے ساتھ ہیں اور ہر فورم پر انکے ساتھ کھڑے ہیں

Back

مزید : پشاورصفحہ آخر