سردی میں کمی کے باوجود گیس کی قلت برقرار ، محکمہ کی عوام کو صرف تسلیاں

سردی میں کمی کے باوجود گیس کی قلت برقرار ، محکمہ کی عوام کو صرف تسلیاں

لاہور( افضل افتخار) صوبائی دارلحکومت لاہور میں گیس کی قلت پر قابو نہ پایا جاسکا شہر میں سردی کی شدت میں کمی کے باوجود شہر کے کئی علاقوں میں شہری گیس کی لوڈشیڈنگ کا شکار ہیں اور ان کی زندگی اجیرن بن گئی ہے جبکہ محکمہ سوئی گیس کی جانب سے ان کے لئے سوائے دلاسوں کے عملی طور پر کچھ نہیں کیاگیا جس پر شہری شدید مشکلات کاشکار ہیں رو ز نامہ پاکستان سے اس حوالے سے گفتگوکرتے ہوئے نذیر شوکت،محمد پرویز اور حاجی دبر نے کہا کہ گیس کی قلت نے ان سردیوں میں ہمیں بہت پریشان کیا ہے اور ہم پر مالی بوجھ بھی بڑھ گیا ہے ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ہمیں اگر ریلیف نہیں دے سکتے تو پھر بلند و بانگ دعوے بھی نہ کیاکریں ہم نے اس نئی حکومت سے بہت امیدیں وابستہ کی تھی مگر افسوس کی بات ہے کہ گزشتہ حکومتوں کی طرح اس حکومت نے بھی صرف اور صرف جھوٹے وعدے ہی کئے۔ ملک شوکت،عادل ،آصف،عاصم اور بابر نے کہا کہ پاکستان میں گرمی اور بجلی اور سردیوں میں گیس کی قلت پر جب تک قابو نہیں پایا جاتا اس وقت تک کوئی بھی حکومت کامیاب نہیں ہوسکتی کیونکہ اس وقت پاکستان میں عوام کے لئے یہ دو ہی بنیادی مسائل ہیں جن کا وہ مدتوں سے شکار ہیں اور اب تک ان مسائل میں کوئی کمی نہیں ہوئی عدنان،شکیل،محبوب اور ساجد نے کہا کہ ہم وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ملک کی ترقی کی طرف توجہ دیتے ہوئے ہمارے بنیادی مساثئل بھی حل کریں اور گیس کی قلت اسوقت ہمارا بنیادی مسئلہ ہے اور اس پر توجہ دینا حکومت وقت کا کام ہے ہم امید رکھتے ہیں کہ وزیر اعظم پاکستان اس جانب توجہ دیں گے اورعوام اسوقت جن مسائل کاشکارہیں اس کودور کرنے کی کوشش کریں گے اب تو سردی کی شدت میں بھی کمی ہورہی ہے اس کے باوجود گیس کی قلت دور نہ ہونا لمحہ فکریہ ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1