امن دشمنوں کو شکست دیدی ،پی ایس ایل کے موقع پر ہر ممکن سکیورٹی دینگے ،وزیراعلیٰ سندھ

امن دشمنوں کو شکست دیدی ،پی ایس ایل کے موقع پر ہر ممکن سکیورٹی دینگے ...

کراچی(این این آئی)وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے امن دشمنوں کو شکست دے دی ہے، پی ایس ایل کے موقع پر ہر ممکن سیکیورٹی فراہم کریں گے۔اتوارکووزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے 26 سال بعد کراچی میں منعقد ہونے والے میراتھن کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کا امن واپس لوٹ آیا ہے اور یہاں میراتھن ریس کا انعقاد خوش آئند ہے، یہ زبردست ایونٹ ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل کی دوبارہ میزبانی ملنا اعزاز کی بات ہے اور اسپورٹس سرگرمیاں کراچی میں ہونا اس بات کا ثبوت ہے کہ کراچی کا امن بحال ہو گیا ہے۔وزیراعلی سندھ نے کہاکہ کراچی شہر پچھلے کچھ دہائیوں سے امن امان کی صورتحال میں گھرا ہوا تھا۔اب یہاں کا امن امان بہترین ہے اور یہ ایونٹ ہو رہا ہے۔انہوں نے کہاکہ گذشتہ سال ہم میں پی ایس ایل کا فائنل کروایا اب 5 میچ ہونے جا رہے ہیں۔اس امن کی بحالی میں پولیس، رینجرز اور افواج پاکستان کی خدمات قابل تحسین ہیں۔امن امان کی بحالی میں سب سے زیادہ کراچی کے شہریوں کی قربانیاں ہیں۔ کراچی میں ہونے والے تمام ایونٹ کا سہرا عوام کو جاتا ہے۔دوسری طرف وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں امن و امان قائم ہونے سے شہر میں کھیلوں، تجارت اور ثقافتی سرگرمیوں میں اضافہ پرامن کراچی کاثبوت ہیں،کامیاب ایونٹس کا سہرا عوام کوجاتا ہے، ایم کیو ایم سمیت کسی بھی جماعت کی قانون کے دائرے میں مناسب سیاسی سرگرمی پر کوئی اعتراض نہیں سب کو کراچی میں امن خوشحالی کیلئے اپنا فعال کردار ادا کرنا ہوگا۔ وہ اتوار کے روزفرسٹ کمشنر کراچی سٹی میراتھن میں بطور مہمان خصوصی شرکت کے بعد میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ نہ صرف کھیل بلکہ دیگر صحتمندانہ سرگرمیوں میں بھی شہر میں اضافہ ہوا ہے اور ان کے ساتھ ساتھ تجارتی اور کاروباری سرگرمیوں کو بھی فروغ حاصل ہوا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل ایک بہت بڑا ایونٹ ہوگا اور انہوں نے ذاتی طور پر پی ایس ایل کے آرگنائیزر، قانون نافذ کرنے والے اداروں اور ڈویژنل انتظامیہ کے ساتھ مشترکہ اجلاس کی صدارت کی ہے اور امید ہے کہ دوبارہ یہ ایک بڑے ایونٹ کے ساتھ شہر کا ایک یادگار ایونٹ ثابت ہوگا۔

مزید : صفحہ آخر