اپنوں نے مروایا، ورلڈ کپ میں ضرو ر کپتان ہوں گا: سرفراز احمد

اپنوں نے مروایا، ورلڈ کپ میں ضرو ر کپتان ہوں گا: سرفراز احمد

لاہور(سپورٹس رپورٹر)پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہاہے کہ ٹیم کی کپتانی کیلئے مجھے پہلے بھی گرین سگنل تھااور امید ہے کہ آگے بھی ہوگا،اللہ نے چاہا تو ورلڈکپ میں ضرورت کپتان ہوں گا، صرف ایک لفظ کو لے کر مسئلہ بنایا گیا ہے،وکٹ کے پیچھے بولنا عادت ہے جو تبدیل نہیں کرسکتا ۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفرازا حمد نے کہاکہ ٹیم کی کپتانی کیلئے مجھے پہلے بھی گرین سگنل تھااور امید ہے کہ آگے بھی ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ میچ کے دوران کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی کی ضرورت ہوتی ہے، وکٹ کے پیچھے بولنا عادت ہے اورعادت تبدیل نہیں کرسکتا۔آئندہ میچز میں شعیب ملک کو ہی کپتان برقرار رکھنے کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ٹیم کا کپتان کوئی بھی ہو، پاکستان کے لیے کھیلتے رہیں گے، ٹیم کو سپورٹ کرتا ہوں اور کرتا رہوں گا۔انہوں نے کہاکہ میرے صرف ایک لفظ کو لے کر مسئلہ بنایا گیا میں نے فلیکوایو کو سمجھایا کہ کچھ غلط نہیں کہا اور اس سے معذرت بھی کی۔انہوں نے کہا کہ ٹیم کے تمام کھلاڑی مجھے سپورٹ کرتے ہیں اگر اللہ نے چاہا تو کم بیک ضرور ہوگا۔سرفراز احمد نے اپنے معاملے میں سپورٹ کرنے پر پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ محنت کررہا ہوں، موقع ملا تو بہتر کارکردگی دکھاؤں گا اور کوشش کروں گا کہ جو غلطیاں ہوئیں وہ آئندہ نہ ہوں۔ورلڈ کپ میں قومی ٹیم کی کپتانی کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ فیصلہ پی سی بی نے ہی کرنا ہے، اللہ نے چاہا تو ورلڈ کپ میں ضرور کپتان ہوں گا۔ورلڈ کپ میں کھلاڑیوں کے انتخاب کے حوالے سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ جوٹیم کے لیے بہترین ہوگا وہ ورلڈ کپ کھیلے گا۔انہوں نے کہاکہ تمام لڑکے بہت اچھے ہیں، ایک دوسرے کوسپورٹ کرتے ہیں۔ویسٹ انڈیز کی خواتین کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ ان کا پاکستان آنا خوش آئند ہے۔ایک سوال پر انہوں نے کہاکہ آئی سی سی پرکوئی غصہ نہیں اگرہوتا توان پرہوتا جنھوں نے چیزوں کواچھالا،کوشش کروں گا کہ جو چیزیں ہوئیں آگے نہ ہو۔سرفراز احمد نے کہا کہ چار میچ کیلئے پابندی لگی تومیرا وہاں رکنابے مقصدتھا۔انہوں نے اپنی والدہ کے ردّعمل کے حوالے سے پوچھے گئے سوال پر کہا کہ میری والدہ کاردعمل تھااتنی سی بات پرمیرے بچے کواتنابرابھلا کہہ دیا۔کپتان سرفرازاحمد نے کہا کہ ورلڈ کپ میں پانچ بہترین بولرز کے ساتھ جائینگے،جنید خان بھی ورلڈ کپ کے ممکنہ کھلاڑیوں میں شامل ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ محمد عامر خراب کارکردگی پر ٹیم سے باہر ہوا تھا لیکن اب اچھا کھیل رہا ہے۔

واضح رہے کہ سرفراز احمد نے جنوبی افریقہ کے خلاف ایک روزہ سیریز کے دوسرے میچ میں متوقع شکست کو دیکھتے ہوئے غصے کے عالم میں جنوبی افریقہ کے آل راؤنڈر ایندائل فلکوایو پر نسل پرستانہ جملے کہے تھے جس کو براہ راست سنا گیا تھا انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر قومی ٹیم کے کپتان پر 4 میچوں کی پابندی عائد کردی تھی۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی