وفاق ماتحت عدالتوں کیلئے عمارت کی فراہمی میں ناکام رہا،کیا عدالتوں سے زیادہ میٹروکی ضرورت تھی؟چیف جسٹس اطہر من اللہ

وفاق ماتحت عدالتوں کیلئے عمارت کی فراہمی میں ناکام رہا،کیا عدالتوں سے زیادہ ...
وفاق ماتحت عدالتوں کیلئے عمارت کی فراہمی میں ناکام رہا،کیا عدالتوں سے زیادہ میٹروکی ضرورت تھی؟چیف جسٹس اطہر من اللہ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی دارالحکومت میں آبادی کے تناسب سے کچہری کے قیام سے متعلق درخواست پر انتظامیہ سے 30 روزمیں ماڈل کچہری کیلئے سفارشات طلب کرلیں۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے ہیں کہ وفاق ماتحت عدالتوں کیلئے عمارت کی فراہمی میں ناکام رہا،کیا عدالتوں سے زیادہ میٹروکی ضرورت تھی؟۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں وفاقی دارالحکومت میں آبادی کے تناسب سے کچہری کے قیام کیلئے درخواست کی سماعت ہوئی،چیف جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں بنچ نے درخواست کی سماعت کی،آئی جی اسلام آباد،چیف کمشنر،چیئرمین سی ڈی اے،ڈی سی عدالت پیش ہوئے۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے ہیں کہ وفاق ماتحت عدالتوں کیلئے عمارت کی فراہمی میں ناکام رہا،کیا عدالتوں سے زیادہ میٹروکی ضرورت تھی؟۔

عدالت نے ریمارکس دیئے کہ اسلام آبادمیں ماڈل جوڈیشل کمپلیکس کاقیام حکومت کی ذمہ داری ہے،عدالت نے انتظامیہ سے 30 روزمیں ماڈل کچہری کیلئے سفارشات طلب کرتے ہوئے سماعت 12 مارچ تک ملتوی کردی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد