حکمرانوں نے امریکہ کی خاطر ملکی سا لمیت اور آزادی قربان کر دی، مولانا سمیع الحق

حکمرانوں نے امریکہ کی خاطر ملکی سا لمیت اور آزادی قربان کر دی، مولانا سمیع ...

نوشہرہ کینٹ(آن لائن )دفاع پاکستان کونسل کے چیئرمین مولانا سمیع الحق نے امریکی صدر ٹرمپ کے حالیہ انٹرویو پر شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی حکمرانوں نے امریکہ کے خاطر ملک کی سا لمیت اور آزادی کی قربانی دی، پورے ملک کو بارود اور خون میں نہلا دیا، ملک کے امن و امان کو خود کش حملوں اور دھماکوں کی نذر کر دیا اور اپنے برادر اسلامی ملک افغانستان کے لاکھوں شہداء سے غداری کر کے ان کی آزادی کو دوبارہ غلامی میں تبدیل کرایا اور ان پر اپنے فراہم کردہ ہوائی اڈوں سے ستاون ہزار آٹھ سو حملے کرا دئے اور ہر وہ کام کیا جس کا کوئی غیر ت مند آزاد ملک تصور بھی نہیں کر سکتا ہے، مولانا سمیع الحق یہاں کے پی کے جمعیت علماء اسلام کے صوبائی مجلس شوریٰ سے خطاب کر رہے تھے ،جس کی صدارت مولانا سید یوسف شاہ کررہے تھے۔ مولانا سمیع الحق نے کہا کہ ہم نے خود اور پارٹی کے پلیٹ فارم سے روز اول سے اس پالیسی کی مخالفت کی اور حکمرانوں سے کہا کہ وہ امریکہ کی جنگ اپنے ملک میں نہ لڑیں یہ آگ نہ بجھ سکے گی مگر ننگ ملت غدار جرنیل مشرف نے اپنے اقتدار کی خاطر پورے ملک کو داؤ میں لگا دیا، پارلیمنٹ اور حکومتوں کے طلب کردہ آل پارٹیز کانفرنسوں نے اس پالیسی سے یو ٹرن لینے کا کہا مگر حکمران ٹس سے مس نہ ہوئے، ہم نے نیٹو کو رسدکی سپلائی کے خلاف لانگ مارچ کئے مگر خنزیر شراب اور اسلحہ کی سپلائی جاری رہی ، سوات کو اجاڑ دیا اور ہزاروں شہری لاپتہ کر دئے گئے، اپنے غیور پانچ ہزار فوجی جرنیل ، بریگیڈیئر اور کمانڈر امریکہ پر وار دئے، ساٹھ ستر ہزار بے گناہ شہریوں کو قربان کر دیا، اسلام آباد میں پنٹا گان بنایا ہم نے معصوم بے گناہ سفیروں کو ننگا کر کے آپ کے حوالے کر دیا، اپنے حکمرانوں کوہر وقت قرآن کاارشاد اور اللہ کا فرمان یاد دلاتے رہے کہ یہود ونصاریٰ آپ سے راضی نہیں ہوں گے جب تک تم خود یہودی اور عیسائی نہ بن جاؤ۔ حکومت کی آنکھیں اب بھی نہ کھلیں تو ہماری تباہی یقینی ہوگی ،مولانا نے کہاکہ اس سب کچھ کے بعد پوری قوم نے یکجہتی کرکے اپنے بہادر افواج کے شانہ بشانہ کھڑے ہوکر اس صلیبی دہشت گردی کا مقابلہ کرنا ہوگا۔اجلاس میں جمعیت علماء اسلام ضلع شانگلہ کے تیرہ رکنی وفد مولانا فضل سبحان حقانی کی قیادت میں اجلاس میں بطور خاص شرکت کی اور جمعیت علماء اسلام ف سے مستعفی ہونے کا اعلان کرکے جمعیت علماء اسلام س میں شمولیت کا اعلان کیا۔ وفد میں طاہر خان ،مولانا حسن گل،باباشمس الدین، شہزاد گل،مولانا اسلام الحق،یاسر خان،قاری عقل زمان، قاری عمرزادہ، قاری نذیر،معراج الدین درویش،محمد علی، قاری اکرام الحق اور فر قان علی شامل تھے، اسی طرح مالاکنڈ ایجنسی کے مولانا عمر رحمان نے بھی اس موقع پر جمعیت علماء اسلام س میں شمولیت کا اعلان کیا، اجلاس میں یہ فیصلہ کیا کہ پشاور ،ہزارہ، اور جنوبی اضلاع میں عنقریب کنونشنوں کا اعلان کیا جائے گا۔

سمیع الحق

مزید : علاقائی