واپڈا کے ہزاروں کارکنوں نے یوم مطالبات منایا، لاہور سمیت کئی شہروں میں ریلیاں

واپڈا کے ہزاروں کارکنوں نے یوم مطالبات منایا، لاہور سمیت کئی شہروں میں ...

لاہور(خبر نگار)واپڈا کے ہزاروں کارکنوں نے آل پاکستان واپڈا ہائیڈرو الیکٹرک مطالبات تسلیم کرانے اور قومی ادارہ میں بعض اہم ممبر قومی اسمبلی کے ایما پر بھرتی کے قانون کے خلاف بھرتی کرنے کے مجوزہ اقدامات روکنے کے لئے یوم مطالبات منایا۔ مختلف شہروں گوجرانوالہ، فیصل آباد، راولپنڈی، پشاور، حیدر آباد، کوئٹہ ، ملتان ، سکھرمیں زبردست ریلیاں اور جلوس و جلسے کئے ۔ لاہور میں محکمہ بجلی کے سینکڑوں محنت کشوں نے پریس کلب شملہ پہاڑی سے زبردست ریلی نکالی انہوں نے قومی پرچم اور اپنے مطالبات کے حق میں بینرز اٹھار رکھے تھے ریلی کو مزدور رہنما خورشید احمد جنرل سیکرٹری یونین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ بجلی اورواپڈاکے اڑھائی کروڑ بجلی کے صنعتی، زرعی، تجارتی اور گھریلو صارفین کو بجلی مہیا کرتا ہے اورواپڈااپنے ہائیڈل پاور اسٹیشنوں سے قومی ادارہ قوم کو سستی بجلی بحساب 2روپے فی یونٹ پیدا کرتا ہے اور ڈیموں کے پانی سے عوام کی بنیادی ضرورت پوری کرتا ہے۔ حکومت کا فرض ہے کہ قومی صنعت ،زراعت و تجارت وغیرہ عوام کی تعمیروترقی کے لئے واپڈا کے نئے ہائیڈل پاور سٹیشن اور نئے پانی کے ڈیم کی تعمیر کے لئے وسائل مہیا کرے اور کھربوں روپے مالیت کے قومی محکمہ بجلی کی کمپنیوں کے موثر انتظام کے لئے انہیں نجی بورڈ آف ڈائریکٹر کے کنڑول سے آزاد کرے اسے قومی ادارہ کے تحت مکمل اختیار دے اور بجلی کی چوری روکنے اور اس کے واجبات کی وصولی کے دوران بجلی کے کارکنوں کو لاقانونیت غیر قانونی عناصر کے خلا ف تحفظ فراہم کرے اور کام پر لائن سٹاف کی کمی اور حفاظتی آلات اور ٹریننگ کے وسائل کی کمی دور کرکے معصوم کارکنوں کے المناک حادثات اور پیشہ وارانہ بیماریوں سے تحفظ کرائے محکمہ بجلی واپڈا کے ملازمین بلخصوص لائن سپرنٹنڈنٹ ، لائن مین، گرڈ عملہ، درجہ چہارم ، ڈرائیور ،پاور ہاؤس اور و ڈیموں کے ملازمین کے پے سکیلز اپ گریڈ کئے جائیں۔ اجلاس میں قرار داد کے ذریعے وزیر اعظم پاکستان و وفاقی وزیر برائے توانائی سے پرزور مطالبہ کیا گیا کہ وہ بجلی کی تمام ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کو تمام چیف ایگزیکٹو آفسران کو ہدایت فرمائیں کہ وہ کمپنیوں میں کنٹریکٹ اور ڈیلی لیبر پر ملازمین کو محکمانہ رولز اور استعداد کے مطابق بھرتی کریں اور سیاسی بنیادوں ایم این اے کی سفارش پر محکمانہ رولز کو نظرانداز کرکے کنبہ پروری، و سفارش نہ کریں کیونکہ اس سے مستحق نوجوانوں کی سخت حق تلفی کے علاوہ قانون کی توہین ہوتی ہے کیونکہ اس سے پہلے سابق منیجنگ ڈائریکٹر میپکو اور حیدر آباد، گوجرانوالہ، ملتان کے چیف ایگزیکٹو افیسر صاحبان کو الزامات اور قانون کی خلاف ورزی پر جیل میں نظر بند رکھا گیا ہے۔ اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے تمام وفاقی حکومت ، صوبائی حکومتوں اور تمام سیاسی جماعتوں سے پرزور مطالبہ کیا گیا کہ وہ قومی اقتصادی بحالی اور ترقی کا قومی عملی پروگرام مرتب کرکے ملک میں غریب نوجوانوں کی عام بے روز گاری اور تیزی سے بڑھتی ہوئی غربت ،جہالت ، بیمار ی اور سماج میں امیر و غریب کے مابین بے پناہ فرق میں اضافہ کو رکوانے کے لئے مرتب کرکے عمل کرائیں۔ اجلاس میں ایک اور قرار داد میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ لیبر قوانین پر آئی ایل او کنونشن نمبر81کے اصولوں کے مطابق عمل کرائے تاکہ کارکنوں کے کام پر حادثات روکے جاسکیں اور انہیں سماجی تحفظ حاصل ہو اور صنعتی محنت کشوں کی ریٹائرمنٹ کے بعد طبی سہولتیں بحال رکھی جائیں اور ان کی پنشن کم از کم پندرہ ہزار روپے ماہانہ مقرر کی جائے۔ اجلاس میں ملک میں ہونے والے دہشت گردی کی شدید مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ تمام محب الوطن لوگوں کو متحد ہو کر قومی سلامتی کے لئے مساوات، سماجی تعاون ، جمہوریت اورقومی دولت کو تقویت دینے پر مبنی نظام قائم کرے اور ہمیں مل کر اس جدوجہد کو کامیاب بنانا ہے۔ مقررین نے صدر ٹرمپ کے پاکستان کو دھمکی آمیز بیان کی شدید مذمت کرتے ہوئے یاد دلایا کہ پاکستان نے دنیا میں سب سے زیادہ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے میں اپنی جانیں قربان کی ہیں اور اپنے معصوم بچے اور بوڑھے جوان شہید کرائے ہیں اور دنیا کے تمام آزادی پسند اقوام سے اپیل کی کہ وہ ٹرمپ کی دھمکیوں کی مذمت کرتے ہوئے دنیامیں امن کا قیام کرانے اور دہشت گردی کو ناکام بنانے میں پاکستان کا ساتھ دیں۔ اجلاس سے یونین کے نمائندگان حاجی محمد یونس، رانا عبدالشکور، چوہدری مقصود احمد، اسامہ طارق، رانا محمد اکرم ، حاجی لطیف، ذاکر شاہ نے بھی خطاب کیا۔

واپڈا

مزید : علاقائی


loading...