بھکاریوں کے روپ میں متعددشر پسند عناصر گرم کریک ڈاؤن کا فیصلہ

بھکاریوں کے روپ میں متعددشر پسند عناصر گرم کریک ڈاؤن کا فیصلہ

لاہور (لیاقت کھرل ) خفیہ اداروں نے رپورٹ دی ہے کہ سال نو کی آمد پر بھکاریوں کے روپ میں بعض شرپسند عناصر سرگرم ہوگئے ہیں جو کہ امن و مان کی فضا کو سبوتاژ کرسکتے ہیں جس پر کسی بھی ممکنہ دشت گردی کے خدشات کے پیش نظر لاہورسمیت صوبے کے بڑے شہروں میں بھکاریوں کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن کرنے کافیصلہ کرلیا گیاہے ۔محکمہ داخلہ پنجاب کے معتبرذرائع کے مطابق پولیس حکام کو رپورٹ میں آگاہ کیا گیا ہے کہ لاہور سمیت پنجاب کے بڑے شہروں میں بھکاریوں کے روپ میں بعض شرپسند عناصر اہم شاہراؤں اور چوراہوں میں پائے گئے ہیں جس پر شرپسندی کے خدشات کے پیش نظرمحکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے ڈویژنل کمشنرزریجن اورڈپٹی کمشنرز،اضلاع اور ریجن کی سطح پر تعینات سی سی پی اور آر پی اوزسمیت ڈی پی اوزکوجاری ہدایات میں واضح کیاگیاہے کہ لاہور سمیت صوبے کے بڑے شہروں کی شاہراوں پربھیک مانگنے خواتین ،بچوں،بوڑھوں ،جوانوں کے علاوہ خواجہ سراؤں کی تعداد میں بھی روزانہ کی بنیاد پراضافہ ہورہاہے ۔ذرائع نے بتایاہے کہ کسی بھی چوک میں اشارہ بندہوتے ہی پیشہ وربھیک مانگنے والے ٹریفک میں پھنسے ہوئے افراد کے علاوہ سیکیورٹی لیکر چلنے والے سول حکومتی شخصیات کے پیچھے چڑھ دوڑتے ہیں۔ جس میں سال نو کی آمد پر لاہور کی اہم شاہراؤں اور سڑکوں سمیت چوراہوں میں کسی وقت بھی کوئی بڑا سانحہ رونما ہوسکتا ہے جس میں گورنر ہاؤس چوک،کینال روڈ(اپرمال پل) گنگارام چوک، ریگل چوک، ٹاؤن ہال چوک سمیت 32 شاہراؤں اور چوراہوں کی نشان دہی کی گئی ہے۔ذرائع کاکہناہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے اس بات کے خدشات کااظہارکیاگیاہے کہ امن وامان کی فضاکوسبوتاژکرنے والے ان بھکاریوں کے خلاف شرپسندی کے خدشات کے پیش نظرسیکورٹی معاملات کومدنظررکھتے ہوئے لاہور سمیت بڑے شہروں میں کریک ڈاون آپریشن کیاجائے ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ خفیہ اداروں کی رپورٹ پر لاہور سمیت پنجاب بھر کے ڈی پی اوز نے بھکاریوں کی جانچ پڑتال شروع کردی ہے۔ جس میں ضلع ڈپٹی کمشنروں کی خدمات بھی حاصل کی جارہی ہیں۔ جس کے بعد بھکاریوں کے روپ میں شرپسند عناصر اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن کیا جارہا ہے۔ جس کا باقاعدہ فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی